نوٹ بند کرنے پر احتجاج کے بعد پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوںکی کارروائی منگل تک کے لیے ملتوی

نئی دہلی:متحدہ حزب اختلاف نے نوٹ بند کرنے کے معاملہ پر ووٹنگ کی متقاضی بحث کے مطالبہ میں چوتھے روز بھی راجیہ سبھا اور لوک سبھا کی کارروائی نہیں چلنے دی جس کے باعث دونوں ایوانوں میں کئی بار کارروائی ملتوی کر نے کے بعد اجلاس دن بھر کے لیے برخاست کر دیا گیا۔
پیر کو جیسے ہی اجلاس شروع ہوا اور کانپور ٹرین حادثہ کے ہلاک شدگان کو خراج عقیدت پیش کیا گیا کانگریس، ترنمول کانگریس، کمیونسٹ پارٹیوں اور عام آدمی پارٹی کے اراکین ایوان کے وسط میں جمع ہو گئے اور 500اور ایک پہزار روپے کے نوٹ بند کر دیے جانے پر ضابطہ56کے تحت جس میں ووٹنگ یقینی ہوتی ہے،بحث کے لیے تحریک التوا پیش کی۔
لیکن وزیر برائے پارلیمانی امور اننت کمار نے کہا کہ اگر حزب اختلاف193کے تحت، جسمیں ووٹنگ یا قرار داد کی منظوری لازمی نہیں ہوتی ،بحث کی اجازت دے تو حکومت بحث کے لیے تیار ہے۔ دریں اثنا راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے ذریعہ مودی مخالف نعروں کی گونج میں ڈپٹی چیرمین پی جے کورین نے ایوان کی کارروائی منگل تک کے لیے ملتوی کر دی۔ اس سے قبل نوٹ بند کرنے کے معاملہ پر حکومت کو پارلیمنٹ میں گھیرنے کی حکمت عملی وضع کرنے نیز آئندہ کا متحدہ و علیحدہ علیحدہ لائحہ عمل مرتب کرنے کے لیے حزب اختلاف کی تمام پارٹیوں کے ممبران پارلیمنٹ کا پیر کی صبح اجلاس ہوا جس میں راجیہ سبھا اور لوک سبھا دونوں ایوانوں کے اپوزیشن ممبران نے شرکت کی۔
اس اجلاس کے بعد ترنمول کانگریس کے ممبران نے ایوان کے دروازے پر حکومت کے خلاف نعرے لگائے۔پیر کی صبح ہونے والے اجلاس میں کانگریس صدر راہل گاندھی، راجیہ سبھا میں حزب اختلاف کے قائد غلام نبی آزاد، بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے رہنما ستیش مشرا، راشٹریہ جنتا دل (ر جے ڈی) لیڈر جے پرکاش نرائن، پی سی گپتا ترنمول کانگریس لیڈر ڈیرک او برائن اور جنتا دل یونائیٹڈ(جے ڈی یو) لیڈر شرد یادونے بھی شرکت کی ۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Lok sabha rajya sabha adjourned for the day in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply