ہومیو پیتھی کی وسیع سائنسی تفہیم کیلئے تحقیق پر مرکوز توجہ نہایت اہم : صدر جمہوریہ

کولکاتا: صدر جمہوریہ ہند، پرنب مکھرجی نے مغربی بنگال کے کولکاتا میں ”انسانیت کی میراث: ہومیو پیتھی کے 150ویں برس کا جشن“ کے موضوع پر منعقدہ ایک تقریب میں مہمان خصوصی کی حیثیت سے خطاب کیا، اس تقریب کا اہتمام ڈاکٹر پرسنتا بنرجی ہومیوپیتھک ریسرچ فاؤنڈیشن نے ہومیو پیتھی کے ساتھ ڈاکٹر بنرجی کے خاندان کی وابستگی کے 150 برس کا جشن منانے کیلئے کیا تھا۔
اس موقع پر حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے صدر جمہوریہ نے کہا کہ ڈاکٹر پرسنتا بنرجی کے اہل خانہ کی ہومیو پیتھی سے وابستگی کئی نسلوں سے چلی آرہی ہے۔ 19ویں صدی کے وسط سے ڈاکٹر بنرجی کے خاندان کے افراد ہومیوپیتھی سے منسلک ہیں۔ ڈاکٹر بنرجی کے دادا ایشان چندر پنڈت ایشور چندر ودیاساگر کے بھائی تھے۔ ایک مرتبہ ودیاساگر کے نصف سر کے درد کا علاج ہومیوپیتھی کے ذریعہ کیا گیا۔ کامیاب علاج سے خوش ہوکر ودیاساگر نے اپنے بھائی ایشان چندر کواس طریقہ علاج کو آگے لے جانے کیلئے آمادہ کیا۔ ایشان چندر نے ہومیوپیتھی سیکھی او ررفاہی خدمات کے تحت غریبوں کا علاج کرنا شروع کیا۔
ایشان چندر کے بیٹے پریشناتھ بنرجی نے مہیجام نامی بہار کے ایک گاؤں میں ہومیو پیتھی کی پریکٹس کی۔ ان کی شہرت دور دراز تک مریضوں کو راغب کرنے لگی اور لوگ علاج کیلئے ان کے پاس آنے لگے۔ وہ ہندوستان میں ہومیو پیتھی ادویاتی مرکب کے بنیاد گزار بن گئے۔ پریشناتھ بنرجی کے دوسرے بیٹے ڈاکٹر پرسنتابنرجی اس ممتاز گھرانے میں تیسری نسل کے ہومیوپیتھک پریکٹیشنر رہے۔
ان کے بیٹے ڈاکٹر پرتیپ بنرجی نے اپنے خاندان کی روایت کو زندہ رکھا۔ ڈاکٹر پرسانتا بنرجی اور ان کے بیٹے ڈاکٹر پرتیپ بنرجی نے 1993 میں ہومیوپیتھک ریسرچ فاؤنڈیشن کو قائم کیا۔ اس کے قیام کا مقصد ہومیوپیتھی کو ایک سائنسی اور مؤثر طریقہ علاج کے طور پر فروغ دینا تھا۔ یہ فاؤنڈیشن حفظان صحت سے متعلق ہومیوپیتھی کے متعدد ذرائع سے عام لوگوں کی خدمات انجام دے رہا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Legacy to humanity celebrating 150 years of homeopathy in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply