ہزار ،پانچ سو کے نوٹ ہونے کے باعث ایک ضعیفہ کے آخری رسوم ادا نہ کیے جاسکے

بھوپال:پورے ملک میں 500 اور ایک ہزار روپے کے نوٹ اچانک غیر قانونی قرار دے دیے جانے کے بعد مدھیہ پردیش کے چھتر پور میں افسوسناک معاملہ سامنے آیا ہے۔ چھتر پور ضلع کی ایک خاتون کی اسی رات اعلان کے چند گھنٹے بعد موت ہو گئی تھی۔ لواحقین کے پاس صرف 500۔1000 کے نوٹ ہونے کی وجہ سے آخری رسوم کا سامان نہیں مل پا رہا تھا ۔
ذرائع نے بتایا کہ ضلع کے شہر سٹی کوتوالی تھانہ علاقے کے ماتوان محلہ کی رہائشی 70سالہ راجبائی (70) زوجہ متھرا پرساد کی موت کے بعد جب ان کے گھر والے آخری رسومات کا سامان لینے مارکیٹ گئے تو دکانداروں نے بڑے نوٹ لینے سے انکار کر دیا، جس کے سبب انہیں خالی ہاتھ واپس آنا پڑا۔ لواحقین نے محلے والوں اور رشتہ داروں سے 100 اور 50 کے نوٹ جمع کرنے کی کوشش کی، لیکن بات نہیں بنی۔ ایسے میں بہت سے سماجی کارکن سامنے آئے، جس کے بعد دوپہر تقریباً ایک بجے خاتون کے آخری رسوم ادا کی جاسکیں

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Last rites of an old woman in mp could not be performed in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags:

Leave a Reply