جھارکھنڈ پولس فائرنگ میں کسانوں کی ہلاکتوں پر مودی جی خاموش کیوں ہیں : لالوپرساد

پٹنہ:راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے سربراہ لالو پرساد یادو نے بی جے پی حکومت والی ریاست جھارکھنڈ کے ہزاری باغ ضلع کے بڑکا گاؤں پولس فائرنگ میں چار کاشتکاروں کی ہلاکت پر خاموشی سادھے رکھنے پر وزیر اعظم نریندر مودی کوآڑے ہاتھوں لیا ۔انہوں نے کہا کہ دوسرے ممالک میں ہونے والے واقعات پر اپنا ردوعمل ظاہر کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہ جانے دینے والے نریندر مودی آخر اس واقعہ پر خاموش کیوں ہیں۔
یاد رہے کہ اس سے پہلے دو شنبہ کو مسٹر یادو نے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پر ٹویٹ کرکے جھارکھنڈ حکومت پر جم کر حملہ کیا تھا۔ انہوں نے ٹویٹ کر کے کہا تھا کہ سرمایہ دار بی جے پی حکومت کسانوں کی زمین بھی لے رہی ہے اور جان بھی۔ اور اس کی پولس غریب، قبائلی اور وسائل سے محروم لوگوں پر بلا اشتعال فائرنگ کرکے ہلاک کر رہی ہے۔
جھارکھنڈ کی جابرانہ، سرمایہ دار اور آمریت بی جے پی حکومت نے گاندھی کی سالگرہ کے موقع پر متعددنہتے کسانوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ قابل ذکر ہے کہ جھارکھنڈ میں ضلع ہزاری باغ کے بڑکاگاؤں میں این ٹی پی سی کے کوئلہ کان کنی کی مخالفت میں جاری ہے۔ کفن ستیہ گرہ کی تحریک کے 16 ویں دن یکم اکتوبر کی رات پولیس اور نقل مکانی کرنے والوں کے درمیان پرتشدد جھڑپ کے بعد پولیس فائرنگ میں چار افراد ہلاک ہو گئے جبکہ پندرہ سے زائد زخمی ہو گئے تھے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Lalu slams pm for his silence on police firing on farmers in jharkhand in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply