کوہ نورلوٹ کر نہیں لے جایا گیا اس لیے اس پر دعویٰ بھی نہیں کیا جاسکتا:حکومت ہند

نئی دہلی: حکومت ہند نے کہا ہے کہ کوہ نور ہیرا چوری کیا گیا اور نہ ہی لوٹ کر لے جایا گیا اس لیے اس کی واپسی کا دعویٰ نہیں کیا جاسکتا۔ حکومت کے اس موقف پر سپریم کورٹ نے انتباہ دیا کہ حکومت کا یہ موقف مستقبل میں105قیراط کے اس ہیرے پر کسی بھی جائز دعوے کی راہ میں ایک بڑا مسئلہ بن سکتا ہے۔
عدالت عظمیٰ نے اس خیال کا اظہار آل انڈیا ہیومن رائٹس اینڈ سوشل جسٹس فرنٹ نام کی ایک تنظیم کی اس عذرداری پرکیا ہے جس میں کوہ نور اور ٹیپو سلطان کی تلواراور انگوٹھی سمیت کئی نوادرات کو برطانیہ سے ہندوستان واپس منگوانے کے لیے مرکزی حکومت کو ہدایت جاری کرنے کی استدعا کی گئی تھی۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ اس عذر داری کو التوا میں رکھا جائے گا کیونکہ اگر اسے خارج کر دیا گیا تو کہا جائے گا کہ سپریم کورٹ نے کیس خارج کر دیا ہے۔
عدالت نے کہا کہ جس طرح ٹیپو سلطان کی تلوار واپس آئی ہے تو ہو سکتا ہے کہ آئندہ بھی ایسا ہی ہو۔اسے مدنظر رکھتے ہوئے سپریم کورٹ نے مرکز سے کہا کہ اسے چھہ ہفتہ کی مہلت دی جارہی ہے جس میں وہ حلف نامہ داخل کرے اور بتائے کہ کوہ نور ہیرا واپس لانے کے لیے کیا کوششیں کی گئیں اور آئندہ کیا کوششیں کی جاسکتی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kohinoor not stolen let uk keep it suggests government in court in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply