راہل کی کسان یاترا سے این ڈی اے پریشان: کانگریس

نئی دہلی:کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی کی کسان یاترا پر بی جے پی رہنماوں کے تبصرے میں استعمال کی جانے والی زبان پر پر سخت اعتراض کرتے ہوئے کانگریس نے آج کہا کہ ’یاترا‘ سے ’ہکا بکا‘ ہو کر رہ جانے والے حکمراں پارٹی کے لیڈران کسانوں کو راحت پہنچانے میں این ڈی اے حکومت کا ناکامی کو چھپانے کے لیے نازیبازبان استعمال کر رہے ہیں۔
یہاں نامہ نگاروں سے بات کرتے ہوئے آل انڈیا کانگریس کمیٹی کے میڈیا انچارج رندیپ سورجیوالا نے کہا کہ مسٹر راہل گاندھی کی کسان یاترا کی کامیابی سے پریشان بی جے پی لیڈران کو راحت پہنچانے میں این ڈی اے حکومت کا ناکامی کو چھپانے کے لئے بازاری زبان استعمال کر رہے ہیں۔ دیوریا میں مسٹر گاندھی نے ’کھاٹ سبھاوں‘ میں اپنے خطاب میں این ڈی اے حکومت پر الزام لگا یا ہے کہ وہ صرف کارپوریٹ مفادات کا پاس رکھ رہی ہے اسے کسانوں کی پریشانیوں اور تکالیف کا کچھ خیال نہیں۔بی جے پی لیڈر اور مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے مسٹر گاندھی کی ’خاص بات‘ پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’کانگریس کی کھٹیا کھڑی کر نے کے بعد راہل جی کتنا بھی کھٹیا پہ بیٹھ جائیں کچھ نہیں ہونے والا‘۔
بی جے پی ترجمان سمبت پاترا نے کانگریس کے نائب صدر راہل گاندھی کی یو پی میں انتخابی مہم ”مہا پد یاترا“ شروع کرنے کا مضحکہ اڑاتے ہوئے کہا ہے کہ پارٹی میں نئی جان ڈالنے کی ان کی ایسی ساری کوششیں پارٹی کے لیے ہی تباہ کن ہی ثابت ہوئی ہیں۔ انہوں نے مسٹر گاندھی کی مہم پررائے زنی کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر راہل گاندھی ماضی میں ایسی کئی ”پد یاترائیں“ کر چکے ہیں۔ انہوں نے ملک کے کئی حصوں میں ایسی کوششیں کی ہیں لیکن وہ سبھی تباہ کن رہیں۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر گاندھی جہاں کہیں بھی گئے وہاں کی ان کی یاترا آخری یاترا ثابت ہوئی۔
اب باری یو پی کی ہے اور لگتا ہے وہاں بھی وہ پارٹی کو کمزور کرنے ہی جارہے ہیں۔ مسٹر گاندھی نے دیوریا کے رودرپور سے اپنی ”مہا پد یاترا “ شروع کی ہے۔ اس یاترامیں وہ لوک سبھا کے 55 اور اسمبلی کے 223 حلقوں کا احاطہ کریں گے۔ مختلف مقامات پر وہ کسانوں، مزدوروں، نوجوانوں اور معاشرے کے مختلف طبقات کے لوگوں سے ملیں گے۔ مسٹر گاندھی اس دورے میں نکڑ میٹنگیں بھی کریں گے۔ محترمہ سونیا گاندھی نے ابھی حال ہی میں بنارس میں ایک پ±رہجوم شو کیا تھا۔ غالباً اسی سے تحریک پاکر کانگریس نے یو پی میں پھر سے قدم جمانے کے لئے یہ نیا قدم اٹھایا ہے جس کا نعرہ یہ ہے”27 سال یو پی بے حال“۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kisan yatra farmers dying of debt but modi waives off loans for industrialists in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply