کھاپ پنچایت نے پانچ سالہ بچی کے اپنے ہی گھر میں داخلے پر پابندی لگا دی

جے پور: رجاجستھان کے بوندی ضلع میں پولس نے ایک پانچ سالہ معصوم بچی پر اس کے اپنے گھر میں ہی گھسنے پر پابندی لگانے پر ایک کھاپ پنچایت کے دس افراد کے خلاف میس درج کر لیا۔ اس کھاپ پنچایت نے اس بچی کو جس نے غلطی سے ٹٹہری نام کے ایک پرندے کا، جسے بہت مقدس سمجھا جاتا ہے، انڈا توڑ دیا تھا۔

پولس کے مطابق 2جولائی کو کھاپ نے یہ فیصلہ سنایا تھا اور یہ پانچ سالہ بچی ضلع کے پری پورہ گاو¿ں میں اپنے گھر کے باہر تنہا پڑی رہتی ہے کیونکہ پولس کے مطابق کھاپ نے تما م گاو¿ں والوں حتیٰ کہ بچی کے والدین کے بھی اس کے پاس جانے پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔

لیکن پولس اور ضلع انتظامیہ کی مداخلت سے پہلی جماعت میں پڑھنے والی اس بچی کو دس روز بعد گھر کے اندر داخل ہونے کا موقع ملا۔اس واقعہ کی خبر ملتے ہی راجستھان اسٹیٹ ہیومن رائٹس کمیشن نے پولس اور ضلع انتظامیہ سے19جولائی تک جواب طلب کر لیا۔

Title: khap panchayat bars 5 year old from entering house in Urdu | In Category: ہندوستان  ( india ) Urdu News

Leave a Reply