وزیر اعظم کا کشمیر کو ایک بار پھر’ فردوس بر روئے زمیں است ‘ بنانے اورملک کو ترقی کی انتہائی بلندیوں تک لے جانے کا عزم

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے مروجہ ہزار اور پانچ سوروپے کے نوٹوں کی یکایک منسوخی،اشیاءو خدمات ٹیکس(جی ایس ٹی) ،سماجی اتحاد و یگانگت اور تین طلاق جیسے معاملات کے حوالوں کے ساتھ فصیل لال قلعہ سے عوام کو خطاب کرتے ہوئے 2022تک ملک کو ترقی کی انتہائی بلندیوں تک پہنچانے اور دہشت گردی وبدعنوانی سے پاک ’نیا ہندوستان‘ بنانے کا عزم کرتے ہوئے واضح کیا کہ ان کی حکومت دہشت گردوں سے سختی سے پیش آئے گی لیکن کشمیر کا مسئلہ وہاں کے لوگوں کو ’گلے لگا کر‘میل محبت و افہام و تفہیم سے سلجھائے گی تاکہ وہ پھر’ فردوس بر روئے زمیں است‘ کا اعزاز پاسکے۔ مسٹر مودی نے 71 ویں یوم آزادی پر ملک کے باشندوں سے خطاب میں بدعنوانی اور کنبہ پروری سے کوئی سمجھوتہ نہ کرنے کے عہد کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ غریبوں کو لوٹ کر اپنی تجوری بھرنے والوں کو چین سے سونے نہیں دیا جائے گا۔ حکومت نے بہت کم وقت میں 800 کروڑ روپے سے زیادہ بے نامی جائیداد ضبط کی ہے۔ نوٹ کی منسوخی کو بدعنوانی کے خلاف جنگ میں اہم قدم قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کے اس قدم سے لاکھوں کروڑ روپے کی خفیہ دولت باہر لانے میں کامیابی ملی ہے۔ انہوں نے خونی ہجوم کی شکل میں نمودار ہو کر گﺅرکشا کے نام پرقتل کرنے والوں کو سخت انتباہ دیتے ہوئے کہا کہ عقیدے یا گائے سے عقیدت کے نام پر تشدد برداشت نہیں کیا جائے گا۔ انہوں نے مسلم خواتین کے ’تین طلاق‘ کے حوالے سے کہاکہ ملک ان کے حقوق دلانے میں کوئی دقیقہ فرو گذاشت نہیں کیے رکھے گا۔ روایتی رنگ برنگ کی پگڑی پہنے مسٹر مودی نے اس بار اپنی تقریر تقریباً 55 منٹ میں مکمل کی۔
انہوں نے نیو انڈیا کی تعمیر کے لیے نوجوانوں سے شرکت کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ نیا ہندوستان صاف اور صحت مند ہوگا اور سوراج کے خواب کو پورا کرے گا۔ اس ہندوستان میں بدعنوانی اور اقربا پروری سے کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے اور یہ دہشت گردی، فرقہ پرستی اور نسل پرستی سے آزاد ہو گا۔ نئے ہندوستان میں نوجوانوں اور عورتوں کو ان کے خواب پورے کرنے کے لئے بھرپور مواقع ملیں گے۔ نئے ہندوستان میں سب کو اپنی صلاحیتوں کا بھرپور استعمال کرنے کا موقع دستیاب ہوگا۔ انہوں نے 2022 تک کسانوں کی آمدنی کو دوگنا کرنے کے حکومت کے عزم کو دہراتے ہوئے کہا، ”ہم سب مل کر ایک ایسا ہندوستان بنائیں گے، جہاں ملک کا کسان فکر میں مبتلا نہیں ہوگا، چین سے سوئے گا، آج وہ جتنا کما رہا ہے، اس سے دوگنا کمائے گا“۔انہوں نے کسانوں کی خوشحالی کے لیے اٹھائے جانے والے قدم کا تفصیل سے ذکر کیا اور کہا آبپاشی کے 99 بڑے منصوبوں پر کام چل رہا ہے جو 2019 تک مکمل کر لئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کاشت کرنے والے کسانوں کے بنیادی ڈھانچہ کو فروغ اور حکومت نے ’وزیر اعظم کسان املاک منصوبہ‘ لاگو کیا ہے۔ جس میںیہ نظام بنایا جائے گا جو بیج سے مارکیٹ تک کسان کو تقویت بخشے گا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ ’ نیا بھارت‘ ہماری سب سے بڑی طاقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ تین برسوں میں ان کی حکومت نے بے شمارکام کئے ہیں۔ ملک کو نئے ٹریک پر لے جانے کی کوشش کی جا رہی ہے لیکن ساتھ ہی ترقی کی رفتار کو بھی برقرار رکھا گیاہے۔
جموں کشمیر کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیر کا مسئلہ نہ’ گولی سے اور نہ گالی‘ سے بلکہ کشمیریوں کو گلے لگانے سے حل ہوگا۔ تاہم یہ بھی کہا کہ علیحدگی پسندوں اور دہشت گردوں سے نرمی نہیں برتی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ”دہشت گردوں کو بار بار کہا گیا کہ وہ قومی دھارے میں آجائیں۔ہندوستان کی جمہوریت میں آپ کو بات کرنے کا مکمل حق ہے ۔ چین کے ساتھ سرحد پر جاری کشیدگی کے درمیان وزیر اعظم نے کہا کہ ملک کی حفاظت اور سیکورٹی حکومت کی ترجیح ہے اور موقع آنے پر سیکورٹی فورسز دشمن کے حوصلے پست کرنے کی طاقت رکھتی ہیں۔ انہوں نے بری ، بحری اور فضائی ہر جگہ ملک کی سلامتی کے عہد کا اظہار کرتے ہوئے کہا، ”سمندر سے لے کر سرحد اور سائبر سے لے کر خلا تک ہرطرح کی حفاظت حکومت کی ترجیح ہے۔ ہماری فوج اور مسلح فورسز نے موقع آنے پر اپنی طاقت، صلاحیت ، قابلیت اور مستعدی دکھادی ہے اور وہ دشمن کے حوصلے پست کرنے کے لئے مکمل طور باصلاحیت اور طاقتور ہیں۔ پاکستان کا نام لیے بغیر سرحد پار دہشت گردی کو کسی بھی قیمت پر برداشت نہ کرنے کا عزم کا اظہار کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ بین الاقوامی دہشت گردی کے خلاف لڑائی میں ہندوستان اکیلا نہیں ہے۔ دنیا اس کے ساتھ ہے۔ تمام ملک دہشت گردی کے حوالے سے اطلاعات کا تبادلہ کرنے میں ہندوستان سے تعاون کر رہے ہیں۔ وزیر اعظم نے اگلے سال ووٹر لسٹ میں شامل ہونے والے نوجوانوں کے لیے لال قلعہ کے فصیل سے خصوصی پیغام دیا اور کہا کہ یکم جنوری 2018 کوئی عام دن نہیں ہو گا، اس دن کے بعد پیدا ہونے والے ہمارے ملک کی قسمت کے ’معمار‘ ہوں گے۔
نئے ملینیم یعی2000 میں پیدا ہوئے نوجوانوں کے لئے یہ سال بہت اہم سال ہوگا۔ یہ نوجوان 18 سال کے ہو جائیں گے۔ انہوں نے کہا، ”میں ان کا احترام کرتا ہوں، ان کو سلام کرتا ہوں۔میں ان سے اپیل کرتا ہوں کہ آئیے آپ ملک کی تعمیر و ترقی میں شراکت دار بنیں“۔ مسٹر مودی نے بدعنوانی کے خلاف بہت بڑی جنگ جاری رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ نوٹ کی منسوخ کے بعد تین لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ اضافی فنڈز بینکوں میں آیا ہے جس میں پونے دو کروڑ روپے کی رقم شک کے دائرے میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ تین سال پہلے بیرونی ممالک میں جمع کالا دھن کا پتہ لگانے کے لئے قائم خصوصی جانچ دستہ (ایس آئی ٹی) نے تقریبا سوا لاکھ کروڑ روپے کی کثیر رقم کا پتہ لگایا ہے ۔ اس سال یکم اپریل سے پانچ اگست کے درمیان 56 لاکھ انکم ٹیکس ریٹرن بھری گئیں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ 18 لاکھ سے زائد ایسے لوگوں کی نشاندہی کی گئی ہے جن کی آمدنی حساب کتاب سے زائد ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmir issue can be resolved by embracing them not by bullets abuses says pm modi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply