جموں و کشمیر پر ہندوستان کا غیر قانونی قبضہ ہے:جے این یو پروفیسر

نئی دہلی:9فروری کو پارلیمنٹ پر حملے کے مجرم افضل گرو کی برسی کے موقع پر جے این یو میں شروع ہوئے تنازعہ کی آگ وقت گذرنے کے ساتھ ٹھنڈی ہونے کے بجائے سلگتی ہی جارہی ہے اور اس پر اس وقت مزید پٹرول چھڑک دیا گیا جب ایک اور نیا ویڈیو منظر عام پر آیا یا لایا گیا جس میں جے این یو کی ایک پروفیسر نویدیتا مینن کو یہ کہتے ہوئے دکھایا گیا ہے کہ ”کشمیر ہندوستان کا حصہ نہیں ہے اور آزادی کے حق کشمیریوں کا نعرے لگانا حق بجانب ہے“۔
پروفیسر مینن نے 22فروری کو جے این یو طلبا کے ایک مجمع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہر شخص اس امر سے واقف ہے کہ ہندوستان کا کشمیر پر غیر قانونی قبضہ ہے اور ہر شخص اسے تسلیم کرتا ہے۔ پروفیسر مینن نے کہا کہ ٹئم اور نیوز ویک جیسے غیر ملکی جریدوں اور اخبارات میں ہندوستان کا جو نقشہ شائع ہوتا ہے وہ کشمیر کا دوسرا ہی نقشہ دکھاتا ہے۔
ان جریدوں کے نسخے ہمیشہ تنازعہ پیدا کرتے رہتے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ جب ساری دنیا کشمیر پر ہندوستان کے غیر قانونی قبضہ کی بات کرتی ہے تو ہمیں سوچنا چاہئے کہ وادی میں آزادی کے حق میں نعرے لگانا درست ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Kashmir illegally occupied by india says jnu professor in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply