سپریم کورٹ نے ہائی کورٹ کے جج جسٹس کرنان کو 6ماہ کے لیے جیل بھیج دیا

نئی دہلی:سپریم کورٹ نے کلکتہ ہائی کورٹ کے جج چنا سوامی سومی ناتھن کرنان کو توہین عدالت کیس میں منگل کے روز 6ماہ کے لیے جیل بھیج دیا۔ ہندوستانی عدلیہ کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہوگا کہ ہائی کورٹ کے کسی موجودہ جج کو جیل بھیجا گیا ہے۔ کرنان 6ماہ بعد ریٹائر ہوں گے۔عدالت نے مغربی بنگال کی پولس کو حکم جاری کیا ہے کہ وہ فیل الفور جسٹس کرنا ن کو گرفتار کر لے ۔لیکن ذرائع کے مطابق کرنان پیر کی رات میں ہی کولکاتا سے چنئی روانہ ہو گئے۔عدالت عالیہ و عظمیٰ میںوقار کی یہ جنگ ایک ماہ سے جاری ہے ۔اس سے ایک روز قبلجسٹس کرنان نے چیف جسٹس جے ایس کیہر سمیت سپریم کورٹ کے 6 ججوں کو پانچ سال کی قید بامشقت کی سزا سنائی ہے۔
جج نے یہ فیصلہ مندرجہ فہرست ذات و قبائل (انسداد زیادتی) قانون کے تحت مجرم پائے جانے پر دیا ہے۔ خیال رہے کہ خود جسٹس کرن پر عدلیہ کی توہین کرنے اور سپریم کورٹ ججوں کے خلاف بدعنوانی کے الزامات لگانے کو لے کر عدالت کی توہین کا الزام ہے۔ سپریم کورٹ کی بنچ نے ان کے عدالتی کام کاج کو جاری رکھنے کی درخواست یہ کہتے ہوئے خارج کرا دی تھی کہ ہائی کورٹ کے جج دماغی طور پر ٹھیک نہیں ہیں۔ عدالت عظمیٰ نے جسٹس کرنان کے خلاف 17 مارچ کو ضمانتی وارنٹ بھی جاری کیا تھا۔ 2 مئی کو جسٹس کرنان نے آئین کے آرٹیکل 226 کا استعمال کرتے ہوئے سرسری حکم جاری کیا تھا۔

Title: justice karnan gets six months in jail for contempt sc | In Category: ہندوستان  ( india )
Tags: , , ,

Leave a Reply