اجودھیا معاملہ میں سپریم کورٹ کے فیصلہ سے عوام میں انصاف کے عمل پر یقین بڑھا ہے:ظفریاب جیلانی

نئی دہلی: سنی سینٹرل وقف بورڈ کے وکیل اور بابری مسجد ایکشن کمیٹی کے کنوینر ظفریاب جیلانی نے بابری مسجد انہدام مقدمہ میں لال کشن آڈوانی، مرلی منوہر جوشی اور اوما بھارتی سمیت تمام 12سنگھ پریوار لیڈروں پر مقدمہ چلانے کے لیے سپریم کورٹ کے حکم کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ اس سے عام لوگوں میں انصاف کے عمل کے تئیں یقین بڑھا ہے۔
مسٹر جیلانی نے ٹیلی فون پر معروف اردو نیوز ایجنسی “یواین آئی” سے بات کرتے ہوئے کہا کہ سی بی آئی اگر سپریم کورٹ میں پہلے چلی گئی ہوتی تو فیصلہ اور جلدی آ گیا ہوتا۔ ان کا کہنا تھا کہ مقدمے پر اب سپریم کورٹ کی نظر رہے گی۔
اس لئے چاہ کر بھی کوئی گڑبڑی نہیں کر پائے گا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں معلوم ہے کہ سی بی آئی نے سپریم کورٹ میں جانے میں تاخیر کیوں کی، لیکن عدالت کے حکم سے ملک کے سیکولر لوگوں میں انصاف کے عمل کے تئیں یقین میں اضافہ ہواہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ امید کرتے ہیں کہ مجرموں کو دو سال کے اندر سزا مل جانا چاہئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Just sc has delivered says aimplb member in babri case in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply