دہشت گردی کے خلاف جنگ کسی مذہب یا فرقہ کے خلاف نہیں :وزیر اعظم مودی اور شاہ اردن کا اظہار خیال

نئی دہلی:وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا ہے کہ دہشت گردی اور بنیاد پرستی کے خلاف جنگ کسی مذہب یا فرقہ کے خلاف نہیں بلکہ گمراہ اور بھٹکے ہوئے نوجوانوں کے خلاف ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ ہماری نوجوان نسل کو انٹرنیٹ پر نفرت کو فروغ دینے والے افکار و نظریات سے بچانے کی ضرورت ہے۔
وگیان بھون میں اردن کے سلطان عبداللہ دوم بن الحسین کی موجودگی میں ‘اسلای میراث: تفہیم اور اعتدال پسندی ‘ موضوع پر اپنے لیکچر میں کہا کہ ہندوستان دنیا کے تمام مذاہب کا مقدس مسکن ہے اور کہا کہ جو لوگ مذہب کو نہیں جانتے، وہی نفرت پھیلاتے ہیں، تصادم پیدا کرتے ہیں اور دہشت گردی کے راستے کو فروغ دیتے ہیں۔
مذہب پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے شاہ اردن نے کہا کہ مذہب کا مقصد اور نصبالعین پوری انسانیت کو متحد اور یکجا رکھنا ہے۔
آج پوری دنیا کو دہشت گردی سے خطرہ ہے اور ہم سب کو دنیا کو درپیش اس خطرے کو بہت سنجیدگی سے لینا ہوگا اور مذہب کو سمجھنا ہوگا۔اسلام کی تعلیمات کو سمجھنا ضروری ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ مختلف مذاہب یا ان کے ماننے والوں کے درمیان نہیں بلکہ اعتدال پسندوں اور انتہا پسندوں کے درمیان ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jordan king abdullah addresses conference with narendra modi says global terror war not against any religion in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply