جے این یو میں کم از کم لازمی حاضری کے معاملہ پر ہنگامہ

نئی دہلی: جواہر لال نہرو یونیورسٹی ایک بار پھراس وقت سرخیوں میں آگئی جب طلبا نے یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے وضع کردہ کم از کم لازمی حاضری کے ضابطہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے یونیورسٹی ایڈمنسٹریشن کے دو افسروں کو یرغمال بنا لیا ۔ کیمپس میں جمعرات کی دوپہر سے رات دیر گئے تک ہنگامہ ہوتا رہا۔
بائیں بازو کی تنظیموں سے وابستہ طلبا اور اساتذہ نے لازمی حاضری کے خلاف یونیورسٹی بند کی کال دی تھی۔ طلبا نے ویڈیو سوشل میڈیا پر پوسٹ کر کے پولس پر الزام لگایا کہ اس نے پرامن طور پر مظاہرے کے دوران طلبا سے بد سلوکی کی۔ان طلبا نے جن کے امتحانات چل رہے تھے کلاس رومز سے باہر زمین پر بیٹھ کر پرچے حل کیے۔اس دوران اساتذہ بھی ان کا ساتھ دیتے رہے۔
واضح رہے کہ 9فروری کو جے این یو ایڈمنسٹریشن کے ایک سرکلر جاری کر کے کہا تھا کہ جن طلبا کی کم ازکم حاضری مطلوبہ فیصد سے کم ہو گی اس کی فیلو شپ ختم کی جاسکتی ہے اور امتحانات میں نہیں بیٹھنے دیا جائے گا۔

Title: jnu students ramp up protest over attendance rule | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply