اے بی وی پی طلبا سے ہاتھا پائی کے بعد جے این یو کا طالبعلم پر اسرار طور پر لاپتہ

نئی دہلی:دہلی کے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کا طالب علم اور آل انڈیا اسٹوڈنٹس ایسوسی ایشن (آئسا) کا کارکن ہفتہ کی رات کو بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے طلبا بازو اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد(اے بی وی پی) سے وابستہ کچھ طلبہ سے تنازع کے بعد سے ہی پراسرار حالات میں لاپتہ ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ پولیس نے لاپتہ طالب علم نجیب احمد کے والدین کی شکایت پر وسنت کنج تھانے میں تعزیرات ہند کی مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے۔
نجیب احمد جے این یو میں بوٹونالوجی میں ایم ایس سی کر رہا ہے۔ آئسا کے ایک کارکن کے مطابق اے بی وی پی کارکنوں کے ساتھ جھگڑے کے بعد سے احمد اپنے ہاسٹل سے لاپتہ ہے۔وہ دو ہفتے پہلے ہی ہاسٹل میں رہنے آیا تھا۔آئسا کارکن نے بتایا کہ احمد نے ایک طالب علم کو تھپڑ مار دیا تھا جس کے بعد طالب علموں کے دو گروپوں میں جھگڑا ہو گیا۔اس کے بعد اے بی وی پی سے وابستہ دیگرطالب علم بھی وہاں آ گئے اور انہوں نے احمد کی پٹائی کر دی۔ اس واقعہ کے بعد سے ہی نجیب احمد لاپتہ ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jnu student missing after altercation with abvp activists in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply