حزب اختلاف کی مودی حکومت کی کشمیر پالیسی پر کڑی تنقید

نئی دہلی:اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں نے کشمیر سے متعلق مودی حکومت کی پالیسیوں پر تنقید کرتے ہوئے آج کہا کہ اگر وہاں حالات پر قابو نہیں پایا گیا تو پاکستان کے بانی محمد علی جناح صحیح ثابت ہو جائیں گے۔ جنتا دل متحدہ (جے ڈی یو) کے شرد یادو نے سوشلسٹ لیڈر اور مفکر مدھو لمائے کی سالگرہ پر یہاں منعقد سیمینار میں کہا کہ پی ڈی پی۔بی جے پی اتحاد کے ایجنڈہ فار الائنس میں حریت سمیت تمام فریقوں سے بات چیت کرنے کی بات کہی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں ضمنی انتخاب سے پتہ چلا ہے کہ وہاں کے عوام نے آئین سے کنارہ کر لیا ہے۔
مسٹر یادو نے کشمیر کے حالات پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے اتحاد اور اس کی سالمیت کے لئے وہ سب سے بڑا چیلنج بن گیا ہے۔ اگر وہاں کے حالات نہیں سدھرے تو جناح صحیح ثابت ہوں گے۔ سی پی ایم لیڈر سیتا رام یچوری نے کشمیر میں ہندستانی جوانوں کے لاشوں کے ساتھ ہوئے وحشیانہ سلوک کو سنگین قراردیتے ہوئے کہا کہ کشمیر میں حکومت کی پالیسی ناکام ثابت ہوئی ہے۔ سی پی آئی کے اتل کمار انجان نے بی جے پی کے ’ایک قوم، ایک نشان اور ایک قانون‘ کے نعرے پر طنز کستے ہوئے کہا کہ پہلے وہ پی ڈی پی کو ملک مخالف بتاتی تھی اور اب اسی کے ساتھ مل کر حکومت بنا لی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jinnahs two nation theory will be proved right opposition in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply