سیواداری سسٹم کے خلاف آواز بلند کر نے والا جوان یگیہ پرتاپ اسپتال میں داخل

نئی دہلی: فوج میں ’سیواداری‘ نظام کے خلاف سوشل میڈیا پر ویڈیو ڈالنے والے لانس نائک یگیہ پرتاپ کو بریلی واقع فوج کے ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ فوج کی جانب سے آج جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ راجپوت رجمنٹ میں گزشتہ ماہ سے تعینات لانس نائک یگیہ پرتاپ نے 14 جنوری سے کھانا چھوڑ رکھا تھا اور اس کا رویہ بھی جارحانہ ہو گیا تھا۔
لانس نائک کی صحت کو دیکھتے ہوئے اور اس کو مناسب طبی امداد فراہم کرنے کے لئے آج بریلی میں واقع فوج کے ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ یہ قدم اس لیے اٹھایا گیا ہے کیونکہ اس کی تعیناتی کی جگہ فتح گڑھ میں کافی طبی سہولت نہیں ہے۔ فوج کے مطابق لانس نائک نے اپنی بیوی سے فون پر بات کی ہے اور وہ اپنے موبائل فون کا استعمال کرنے کے لئے آزاد ہے۔
راجپوت رجمنٹ سینٹر نے لانس نائک پرتاپ کی بیوی سے بات کی ہے اور انہیں بریلی ہسپتال آ کر ان سلامتی کے بارے میں جاننے کے لیے کہا ہے۔ فوج نے ان کے ٹھہرنے کا بھی انتظام کیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ لانس نائک نے گزشتہ ہفتے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو ڈال کر ان سے سیوادار? نظام کے تحت کام کرنے کی شدید مخالفت کی تھی۔ اس کے بعد انہوں نے اور ان کی بیوی نے کھانا چھوڑ دیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jawan who questioned orderly system hospitalised in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply