ہفتہ بھر میں مطالبات پورے نہ ہوئے تو13ریاستیں تحریک کی لپیٹ میں آجائیں گی:جاٹ لیڈر

پانی پت:ملازمتوں اور تعلیمی اداروں میں داخلہ میں ریزرویشن کے اپنے مطالبہ کو عدالت سے بھی منوانے کے لیے ہریانہ میں جاٹ برادری کے لیڈروں کی کال پر اتوار سے دوبارہ مظاہرے شروع کرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ اگر ان کے مطالبات 12 جون تک پورے نہ کیے گئے تووہ نہ صرف دہلی ،پنجاب، ہریانہ، ہماچل پردیش، جموں و کشمیر اور مرکز کے زیر انتظام علاقہ چنڈی گڑھ جانے کے تمام راستوں کی ناکہ بندی کر دیں گے بلکہ تحریک کوملک کی13ریاستوں تک پھیلادیا جائے گا۔
اکھل بھارتیہ جاٹ آرکشن سنگھرش سمیتی کے نائب صدر وجے دیپ پنگھل نے بتایا کہ اس بار جاٹ تحریک کا مرکز پانی پت شاہراہ پر روہتک سے دس کلومیٹر کے فاصلہ پر واقع جسیا گاؤں ہے۔ تحریک کے پہلے روزقریبی دیہات سے تقریباً2ہزار جاٹ جسیا گاو¿ں میں جمع ہو گئے۔اگرچہ ان سے نمٹنے کے لیے پولس پوری طرح تیار تو ہے لیکن مظاہرین کے سامنے ان کی تعداد آٹے میں نمک کے برابر ہے۔
جاٹوں کو آئین کی شق9میں دیے گئے ریزرویشن کے مطالبہ کے علاوہ یہ مطالبہ بھی ہے کہ تحریک کے پہلے مرحلہ میں ان کی برادری کے جن افراد کے خلاف مقدماتقائک کیے گئے وہ واپس لیے جائیں،تحرئیک کے دوران ہلاک 31جاٹوں اور جو 500معذور ہوئے ان کے لواحقین کو معاوضہ دیا جائے اور خاندان کے ایک شخص کو سرکاری ملازمت دی جائے۔
ان مظاہروں کو تشدد میں بدلنے سے روکنے اور کوئی بھی ناخوشگوار واقعہ نہ ہونے دینے کے لیے حکومت ہریانہ نے سخت حفاظتی بندوبست کرتے ہوئے سونی پت، روہتک، جھجھر، جیند، پانی پت اور کیتھل جیسے حساس اضلاع میں تعینات کر دیا گیا ہے۔ اور مرکز سے مزید نیم فوجی دستے بھیجنے کی استدعا کی گئی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jats threaten to spread their agitation to 13 states in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply