اگر جمعرات تک مطالبہ پورا نہ ہوا تو پھر ایجی ٹیشن ہوگا:جاٹ لیڈروں کی دھمکی

چنڈی گڑھ:ہریانہ میں جاٹ لیڈروں نے دھمکی دی کہ اگر منوہر لال کھٹر حکومت نے 17مارچ تک ان کا مطالبہ تسلیم نہیں کیا تو وہ اپنی کوٹہ تحریک،جو گذششتہ ماہ چلائی گئی تھی اور جس میں 30افراد ہلاک ہو گئے تھے،پھر شروع کر دیں گے۔
آل انڈیا جاٹ مہاسبھا کے سربراہ یشپال ملک نے فون پر خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ ہمیں 17مارچ کو آئندہ کا لائحہ عمل مرتب کرنا ہے کہ سڑکوں اور ریل پٹریوں کی ناکہ بندی کی جائے یا کوئی دوسرے قسم کا ہتھکنڈہ استعمال کیا جائے۔
انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کے پاس 24گھنٹے کی مہلت ہے ۔ابھی تک حکومت نے ہمارا کوئی بھی مطالبہ تسلیم نہیں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر حکومت ٹس سے مس نہ ہوئی تو اس بار دیہی علاقوں میں بھی دھرنا دیا جائے گا۔منگل کو جاٹ برادری نے پوری ریاست میں مظاہرے کیے تھے۔
انہوں نے کہا کہ پرامن احتجاج کے باوجود حکومت جاٹوں کو کچلنے میں لگی ہے۔ انہون نے دعویٰ کیا کہ2005سے ملک کی 13ریاستوں بشمول، اترپردیش، اترا کھنمڈ، مدھیہ پردیش، راجستھان، پنجاب اور ہریانہ میں پر امن احتجاج جاری ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jats give ultimatum tell khattar government to meet quota demand by march 17 in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply