جمعیت علماءہند اورنگ آباد اسلحہ برآمدگی مقدمہ کے فیصلہ کو ممبئی ہائی کورٹ میں چیلنج کرے گی

ممبئی:اورنگ آباد اسلحہ ضبطی مقدمہ میںابو جندال سمیت12افراد کو8سال تا عمر قید کی سزا سنائے جانے کے عدالتی فیصلہ پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے جمعیت علماءہند کی قانونی امداد کمیٹی کے سربراہ گلزار اعظمی نے اسے معتدل فیصلہ قرار دیا اور کہا کہ وہ خصوصی عدالت کے فیصلہ کو قبول اور اس کا احترام کرتے ہیں لیکن وہ عدالت کے اس فیصلہ سے متفق نہیں ہیں اور قانون میں دی گئی مراعات کے مطابق وہ اس فیصلہ کو ممبئی ہائی کورٹ میں چیلنج کریں گے۔
انہوں نے مزیدکہا کہ جمعیت علماءہند کے صدرمولانا سید ارشد مدنی کی ہدایت پر وہ تمام 12 مسلم نوجوانوں کو دی گئی سزاؤں کے خلاف عدالت عظمٰی سے رجوع کریں گے کیونکہ انہیں لگتا ہے کہ اس معاملے کے 8 باعزت بری ملزمین کی طرح دیگر مسلم نوجوان بھی بے قصور ہیں اور انہیں تحقیقاتی دستوں نے جھوٹے مقدمہ میں پھنسایا ہے۔
مقدمہ کا سامنا کرنے والے کل 20ملزمین کو مفت قانونی امداد فراہم کرنے والی تنظیم کے شعبہ قانون کے سربراہ نے مزید کہا عدالت کے فیصلہ کی نقول حاصل کرنے کے بعد جمعیت علماءکے وکلاءکا پینل جلد ہی ہائی کورٹ میں اپیل داخل کرے گا اور سزا یافتہ قیدیوں کے لیئے درخواست ضمانت بھی داخل کیجائے گی۔
انہوں نے مزید کہا کہ مقدمہ کی پیروی کرنے والے وکیلوں کی ٹیم میں شامل سینئر ایڈوکیٹ یوگ چودھری، نتیا راما کرشنن، ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان ، شریف شیخ ، ساریم نوید، طارق سید، متین شیخ ،خضر پٹیل، افروز صدیقی، انصار تنبولی، شاہد ندیم انصاری، ارشد صدیقی، رازق شیخ ، افضل نواز، آصف نقوی و دیگر نے انتہائی محنت و مشقت سے سپریم کورٹ سے لیکر نچلی عدالت تک مختلف مراحل میں پیروی کی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jamiat ulamai hind to move high court against aurangabad arms in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply