داعش اسلام دشمن تنظیم ہے اور اسرائیل کے اشاروں پر کام کر رہی ہے، مسلم نوجوانوں کو آگاہ کرنا وقت کی ضرورت: ارشد مدنی

ممبئی:داعش اسلام دشمن تنظیم ہے، وہ اسلام دشمن سرگرمیوں میں ملوث ہے نیز اس کے تار اسرائیل سے جڑے ہوئے ہیں ، مسلم نوجوانوں کو اس بات سے آگاہ کرانا وقت کی ضرورت ہے اور وہ اس سے دوری اختیار کرنے کے ساتھ ساتھ ویب سائٹس اور شوشل میڈیا پر بھی مسلم نوجوان کسی سازش کا شکار نہ ہوں-
ان خیالات کا اظہار آج یہاں جمیعت علما کے قومی صدر مولانا ارشد مدنی نے اپنے ممبئی دورے کے دوران کیا۔ جمعیت کے دفتر میں صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حال ہی میں وہ ساؤتھ افریقہ کے دورے پر تھے اس دوران ان کی ملاقات چند مسلم نوجوانوں سے ہوئی جو داعش سے متاثر ہوکر شام چلے گئے تھے ، دوران گفتگو ان نوجوانوں نے ایک تعجب خیز بات یہ بتائی کہ کسی بھی حملہ میں زخمی ہونے والے داعش کے نوجوانوں کا علاج اسرائیل کے سرکاری اسپتالوں میں ہوتا ہے اور اسرائیل ان کی بھرپور مالی مدد بھی کرتا ہے۔
مولانا ارشد مدنی نے کہا کہ داعش اسلام کی آڑ میں پوری دنیا میں قتل و غارت گری کرکے اسلام کو بدنام کرنے اور غیر اسلامی فعل کررہی ہے جس سے عالمی سطح پر اسلام کی شبہ خراب ہورہی ہے لہذا اب یہ ہماری ذمہ داری ہوگئی ہے کہ داعش کی اصلیت سے عوام کو آگاہ کیا جائے اور خاص کر مسلم نوجوانوں کو اس سے دور رہنے کی تلقین کی جائے۔حالات حاضرہ پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں فرقہ وارانہ تشدد کے واقعات میں تشویش ناک رفتار سے اضافہ ہورہا ہے، زہریلی تقریروں کا سلسلہ قابو سے باہر ہوتا جارہا ہے اور میڈیا کا ایک حصہ پے درپے ایسے معاملات کو پوری قو ت اور مبالغہ آرائی کے ساتھ اٹھانے کی کوشش میں لگا ہوا ہے جن سے بعض فرقوں کے خلاف نفرت کی آگ بھڑک رہی ہے اور یہ حالات ہمارے سماج کو متاثر کررہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ مختلف فرقوں اور طبقات کے درمیان باہمی اعتماد مجروح ہورہا ہے اور سماجی تانے بانے کی تباہی کا اندیشہ لاحق ہونے لگا ہے اس لئے ضروری ہے کہ ملک کے تمام باشندوں کے درمیان انسانی بنیادوں پر برادرانہ تعلقات قائم کیئے جائیں اور ایک دوسرے کے حقوق کے احترام کا جذبہ پیدا کیا جائے۔ملک میں دلتوں کے خلاف مظالم کی تازہ لہر اور اس کے خلاف جاری ہنگامہ کے تعلق سے مولانا ارشد مدنی نے کہا کہ گجرات میں دلتوں کے ساتھ جو مظالم ہوئے ہیں وہ قابل مذمت ہیں۔ملک میں دلتوں کے خلاف ایسے مظالم ہمیشہ سے ہوتے رہے ہیں ، ہم اس کے خلاف ہیں اور مذمت بھی کرتے ہیں،لیکن جس طرح سے میڈیا اور سیاسی جماعتوں نے اس پر واویلا کھڑا کیا ہے۔
انہوں نے مسلمانوں پرہونے والے مظالم پرکبھی بھی نہیں کیابلکہ خاموشی اختیارکی ، جب کہ ان ہی فرقہ پرستوں نے مسلم نوجوانوں کو پکڑ کر انہیں جبراً گوبر کھانے پر مجبور کیاتھا تب یہ سیاسی جماعتیں کہاں تھیں اور انہوں نے حق کی آواز بلند کیوں نہیں کی تھی ، اگر انہوں نے مسلمانوں کے خلاف فسادات اور دیگر مظالم پراسی طرح سے آواز اٹھائی ہوتی تو شاید آج حالات کچھ اور ہی ہوتے اور ملک میں مسلمانوں کے خلاف ایسی فضا ہر گز نہیں بنتی جیسی کہ آج ہے۔مولانا مدنی نے کہا کہ ہم دلتوں کے ساتھ ہیں اور اگر کوئی بھی طبقہ کسی کے مظالم کا شکار ہوتا ہے تو ظلم کرنے والوں کی مخالفت اور مظلومین کی حمایت اپنا فریضہ سمجھتے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jamiat chief madani says daesh is anti islam in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply