سپریم کورٹ نےاطالوی بحری سپاہی لاتورے کو اپنے ملک میں رہنے کی مہلت دی

نئی دہلی: سپریم کورٹ نے کیرالہ میں ماہی گیروں کے قتل کے ملزم اطالوی بحری سپاہیوں کو تب تک اپنے ملک میں رہنے کی مہلت دی، جب تک مقدمہ چلانے کے دائرہ اختیار کے سلسلے میں بین الاقوامی ثالثی عدالت کا فیصلہ نہ آ جائے۔ جسٹس انل آر دوبے، جسٹس کوریئن جوزف اور جسٹس امیتابھ رائے کے سہ رکنی بنچ نے مرکزی حکومت کی جانب سے لاتورے کی درخواست کی مخالفت نہیں کئے جانے کے بعد یہ حکم دیا۔
معاملے میں عدالت عظمی کی سماعت پر بھی ایڈیشنل سالیسٹر جنرل (اے ایس جی) پی ایس نرسمہا نے بنچ کو آگاہ کیاتھا کہ حکومت ہند کو اطالوی سپاہی لاتورے کو بھی اس کے ساتھی سالواتور کی طرح ہی مشروط ضمانت فراہم کرنے پر کوئی اعتراض نہیں ہے۔ لیکن عدالت عظمی نے معاملے کی اگلی سماعت کے لئے آج کی تاریخ مقرر کرتے ہوئے اے ایس جی سے کہا تھا کہ وہ مرکز کا واضح موقف اس کے سامنے رکھے۔
واضح رہے کہ اطالوی سپاہی لاتورے کی جانب سے انہیں اٹلی میں ہی رہنے دینے کی درخواست کی گئی تھی۔ اطالوی بحری سپاہی لاتورے کا کہنا تھا کہ اس کے ساتھی سالواتور کو بین الاقوامی ثالثی عدالت کا فیصلہ ہونے تک اٹلی میں رہنے کی اجازت دی گئی ہے۔ تو اسے بھی یہ مہلت دے دی جائے۔ لاتورے کے اٹلی میں رہنے کی مدت 30 ستمبر کو ختم ہو رہی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Italian marine massimiliano latorre allowed to stay back home in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply