دادری کے اخلاق قتل کیس کو نیا رخ، گوشت بکرے کا نہیں گائے کا ہے، نئی لیب رپورٹ

نئی دہلی: اترپردیش کے دادری میں گذشتہ سال 28ستمبر کو محمد اخلاق نام کے ایک شخص کواس افواہ کے بعد کہ اس کے گھر میں گائے کا گوشت کھایا جارہا ہے اور ذخیرہ بھی کیا گیا ہے پیٹ پیٹ کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔
لیکن اب 8مہینے بعد جو نئی پیب رپورٹ آئی ہے اس میں اسے افواہ نہیں بلکہ حقیقت بتایا گیا ہے کہ یہ گوشت جو جانچ کے لیے بھیجا گیا تھا گائے یابچھڑے یا گائے جیسی نسل کا ہے۔
جبکہ اس سے پہلے جو جانچ رپورٹ آئی تھی اس میں صاف صاف کہا گیا تھا کہ جانچ کے لیے لیبارٹری میں لایا جانے والا گوشت گائے کا،نہیں بلکہ بکرے کا ہے۔اخالق کے بھائی چاند محمد نے کہا دادری پولس کہتی ہے کہ وہ بکرے کا گوشت تھا اور اب کہا جارہا ہے وہ گائے کا تھا ۔
ہم اس رپورٹ کو نہیں مانتے یہ سب سیاست ہو رہی ہے۔ہم یکجہتی میں یقین رکھتے ہیں۔واضح رہے کہ گائے کا گوشت کھانے اور رکھنے کی افواہ کے بعد مشتعل بھیڑ نے اخلاق کو مار مار کر ہلاک اور بیٹے دانش کو شدید زخمی کر دیا تھا۔

Title: it was beef says a new lab report in major twist to dadri lynching | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply