ہندوستانی ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشنز نے اپنے پاکستانی ہم منصب سے فوجیوں کی لاشیں مسخ کرنے کا معاملہ اٹھایا

نئی دہلی:ہندستان کے ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشنز(ڈی جی ایم او) نے اپنے پاکستانی ہم منصب کے ساتھ بات چیت کی ہے اور پاکستانی مقبوضہ کشمیر کے بتال علاقے کے بالمقابل واقع کرشنا گھاٹی سیکٹر میں گزشتہ دنوں رونما ہونے والے انسانیت سوز واقعہ پر اپنی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پاکستانی فوجیوںکی یہ حرکت نہ صرف قابل مذمت و ملامت ہے بلکہ حد درجہ وحشیانہ، غیر انسانی اور تہذیب و شرافت سے پرے ہے۔ واضح رہے کہ کرشنا گھاٹی سیکٹر میں پاکستانی فوج نے لائن آف کنٹرول پر گشت کررہے دوہندستانی فوجیوں کو نشانہ بناکر حملہ کردیا اور انہیں موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد ان کے اعضا کاٹ کر لاشیں مسخ کرنے جیسیبزدلانہ حرکت کی۔
پاکستان کے ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشنز کو اس بات سے بھی واقف کرایا گیا کہ اس بزدلانہ حرکت کو انجام دینے کے دوران جائے حادثہ سے متصل واقع پاکستانی فوجی چوکی سے فائرنگ کے ذریعہ پوری مدد فراہم کرائی گئی۔ ہندستان کے ڈی جی ایم او نے پاکستانی مقبوضہ کشمیر میں لائن آف کنٹرول کے بے حد قریب بی اے ٹی ٹریننگ کیمپ اور ٹیموں کی موجودگی جیسے مسائل بھی اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی غیر انسانی حرکت کسی بھی تہذیب کے خلاف ہے اور یہ واقعہ بلاشک و شبہ قابل مذمت ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Indias dgmo to pakistan on mutilation of soldiers dastardly inhuman act beyond norms of civility in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply