رام مندر تنازعہ طے نہ پایا گیا تو ہندوستان شام میں تبدیل ہو جائے گا:سری سری روی شنکر

نئی دہلی: بابری مسجد ،رام جنم بھومی تنازعہ کا عدالت سے باہر تصفیہ کرنے کی پر زور وکالت کرنے او ر طویل عرصہ سے اس کے حل کی راہیں تلاش کرنے میں لگے آرٹ آف لیونگ کے بانی روحانی رہنما سری سری روی شنکر نے ایک اور قابل اعتراض بیان دے دیا جو اس تنازعہ کی آگ پر تیل کا کام کر کے اسے مزید بھڑکا سکتی ہے۔
انہوں نے انڈیا ٹوڈے کو ایک خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اگر رام مندر مسئلہ طے نہیں پایا تو ہندوستان شام بن سکتا ہے۔ انہوں نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ مسلمان رام جنم بھومی پر اپنے دعوے سے دستبردار ہو جائیں۔ مسلمانوں کو جذبہ خیر سگالی میں اجودھیا پر اپنا دعویٰ چھوڑ دینا چاہیے۔اجودھیا مسلمانوں کے لیے کوئی مذہبی مقام نہیں ہے۔
سری سری نے کہا کہ اسلام کسی متنازعہ جگہ پر مسجد تعمیر کرنے کی اجازت نہیں دیتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ”ہم بھگوان رام کو کہیں اور پیدا ہونے کے لیے نہیں کہہ سکتے“۔سری سری نے اس تجویز کو بھی مضحکہ خیز بتاکر خارج کر دیا کہ متنازعہ مقام پر ، جہاں مغلوں کی تعمیر کردہ مسجد کو 6دسمبر1992کو ہندوؤں کے ایک ہجوم نے ڈھا دیا تھا،اسپتال جیسا کوئی رفاہی ادارہ قائم کردیا جائے۔

Title: india will turn into syria if ram mandir issue is not resolved sri sri ravi shankar | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply