صدر جمہوریہ پرنب مکھرجی نے انڈونیشیا ئی جمہوریت کی تعریف و توصیف کی

نئی دہلی:صدر جمہوریہ ہند پرنب مکھرجی نے گذشتہ شام جمہوریہ انڈونیشیا کے صدر جوکو ویڈوڈو اورمادام ایرانہ وڈیڈوڈو کا راشٹر پتی بھون میں خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ہندستان اور انڈونیشیا کے مابین دیرینہ باہمی تعلقات استوار رہے ہیں۔ دونوں ممالک نو آبادیاتی نظا م کی غلامی سے آزادی حاصل کرنے کے لئے جدوجہد کا مشترکہ تجربہ رکھتے ہیں۔ صدر جمہوریہ ہند نے کہا کہ ہندستان انڈونیشیا کے فعال جمہوریت کی حیثیت سے ابھرنے کا خیر مقدم کرتا ہے اور اس کی اس کامیابی کو بڑی اہمیت دیتا ہے۔ وہاں کا معاشرہ بہت کھلا ہوا ہے اور رواداری ، گوناگونی کے تئیں احترام اور ہم آہنگی پر مبنی ہے۔ صدر جمہوریہ نے کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ ہندوستان اور انڈونیشیا دونوں ممالک انتہا پسندی اور عدم رواداری کے خلاف کھڑے ہوسکتے ہیں۔ ہندستان مشترکہ سلامتی تشویشات اور سرحد پار کے خطرات سے نمٹنے میں انڈونیشیا کے ساتھ اپنے تعاون کو اہمیت دیتا ہے۔ قریبی ، بحری ہمسایوں کے طور پر ہماری قربت سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ وہ کلیدی شعبہ ہے ، جہاں ہمیں باقاعدہ شراکت داروں کے طور پر کام کرنا چاہئے تاکہ سمندری راستوں کی سلامتی اور تحفظ کو یقینی بناسکیں۔ صدر جمہوریہ ہند نے کہا کہ انڈونیشیا آسیان میں سب سے بڑی معیشت ہے اور ساتھ ہی ساتھ اس خطے میں بھارت کا صفحہ اول کا شراکت دار بھی ہے۔
گزشتہ برس ہماری باہمی تجارت 16 بلین امریکی ڈالر کے بقدر تھی۔ ہم اپنی تجارت کے اصل مضمرات کو بھرپور طریقے سے حاصل کرنے کی کوشش کرسکتے ہیں اور اس کے لئے ہمیں اپنی تجارتی اشیا کی فہرست میں گوناگونی پیدا کرنی ہوگی۔ بھارت ، بھارت۔ آسیان تعلقات کو 2017 کے دوران مستحکم بنانے کے لئے انڈونیشیا کے سرگرم تعاون کو اس وقت خاص اہمیت دے گا، جب ہم سربراہ ملاقات کی سطح کی گفت وشنید کے 15 برس مکمل ہونے کی تقریب برپا کریں گے۔ بعد ازاں اپنی ضیافتی تقریر میں صدر جمہوریہ ہند نے کہا کہ انڈونیشیا اور بھارت نے نو آبادیاتی نظام کے خاتمے میں اپنا تعاون دیا ہے اور ناوابستہ تحریک کا آغاز بھی کیا ہے۔ ہندوستان انڈونیشیا کے ساتھ بھرپور اقتصادی تعاون بحری اور فضائی روابط اور باہمی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لئے انڈونیشیا کے ساتھ مل جل کر کام کرنے کا خواہاں ہے۔ بھارت انڈونیشیا کے بحری پروگراموں میں مدد دینے کے لئے بھی تیار ہے اور اس کے ذریعہ بھارت بحرالکاہل خطے کی سلامتی کو یقینی بنایا جاسکے گا۔ 21 ویں صدی کے کثیر پہلوئی عالمی مشترکہ چیلنجوں کا سامنا کرنے میں بھارت اور انڈونیشیا باہم مل کر پوری دنیا کے لئے استحکام لاسکتے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: India and indonesia provide bulwark against radicalism in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply