ہندوستان پرامن بقائے باہم کے اصول کی زندہ مثال ہے:صدر ایران حسن روحانی

حیدر آباد: ہندوستان کو مختلف مذاہب و عقائد اور نسل کے لوگوں کے پر امن بقائے باہم کی زندہ مثال بتاتے ہوئے ایران کے صدر حسن روحانی نے شیعوں اور سنیوں میں اتحاد کی اپیل کی۔ انہوں نے کہاکہ،ہندوستان میں پر امن بقائے باہم کی یہ مثال صدیوں پرانی ہے ۔
شیعہ، سنی، صوفی، ہندو ،سکھ اور دیگر قومیں مل جل کر رہ رہی ہیں۔انہوں نے مل جل کر اپنا ملک اور اپنی تہذیب بنائی۔ یہ کہتے ہوئے کہ فوج کشی سے تنازعات حل نہیں کیے جاسکتے انہوں نے کہا کہ ایران تمام مسلم ممالک اور ہندوستان سہیت خطہ کے تمام ملکوں سے برادرانہ تعلقات رکھنا چاہتا ہے۔
یہاں مختلف مکاتب فکر کے علمائے دین اورمسلم دانشوروں کے اجتماع میں اپنی نصف گھنٹے کی تقریر میں انہوںنے مختلف مسلکوں کے مسلمانوں کے مابین منافرت اور تنازعات کے بیج بونے کا ذمہ دار مغرب کو بتاتے ہوئے شیعہ سنی اتحاد پر زور دیا ۔
انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور ایران کے درمیان سیاسی و اقتصادی تعلقات سے کہیںزیادہ تاریخی اور ثقافتی تعلقات ہیں ۔مسٹر روحانی نے مزیدکہا کہ ایران ہندوستان کے ساتھ مزید خوشگوار اور قریبی تعلقات کا خواہاںہے۔

Title: india a living example of peaceful co existence of people of different religions iranian president in Urdu | In Category: ہندوستان  ( india ) Urdu News

Leave a Reply