حزب اختلاف کے غل غپاڑے میں انکم ٹیکس بل لوک سبھا میں منظور

نئی دہلی: نوٹ بندی کے مدنظر غیر اعلانیہ آمدنی کو پچاس فیصد ٹیکس ادائیگی کے ساتھ قانونی بنانے کے حوالے سے پیش کیا گیا انکم ٹیکس قانون (دوسری ترمیم) بل 2016 کو لوک سبھا نے آج اپوزیشن اراکین کے زبردست ہنگامے کے دوران کسی بحث کے بغیر منظور کردیا۔ وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کل ایوان میں پیش کئے گئے اس بل کو آج جب بحث کے لئے پیش کیا تو اپوزیشن نے اس کی سخت مخالفت کی۔
اپوزیشن جماعتیں پارلیمنٹ کا سرمائی اجلاس شروع ہونے کے پہلے دن سے ہی نوٹ بندی کے معاملے پر ایوان میں زبردست ہنگامہ کررہی ہیں جس کی وجہ سے پچھلے آٹھ دنوں سے کوئی کام کاج نہیں ہوسکا ہے۔ اراکین کا کہنا ہے کہ ایوان میں پہلے تحریک التواکے تحت یا اس بل کے ساتھ ہی نوٹ بندی پر بحث کرائی جانی چاہئے۔یہ بل کل بھی ہنگامہ کے دوران ہی بحث کے لئے پیش کیا گیا تھا۔
بل کو بحث کے لئے پیش کرتے ہوئے مسٹر جیٹلی نے کہا کہ حکومت کالے دھن کو ملک کی سیاست اور معیشت سے پوری طرح ختم کرنے کے اپنے عہد پر قائم ہے اور اس کے لئے مودی حکومت نے اقتدار میں آتے ہی زبردست مہم شروع کردی تھی۔ حکومت کی طرف سے کالے دھن کے خلاف کی گئی کارروائی سے 70ہزار کروڑ روپے کا کالا دھن سامنے آیا تھا۔
مسٹر جیٹلی نے کہا کہ 8نومبر کے بعد سے ملک میں پانچ سو اور ایک ہزار روپے کے نوٹ بند ہونے کے بعد سے ایسا دیکھنے میں آرہا ہے کہ لوگ اپنا کالا دھن غیر قانونی طریقے سے تبدیل کررہے ہیں۔ یہ بل اسے روکنے کے لئے ہی لایا گیا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Income tax bill passed in lok sabha amid uproar by opposition in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply