اترپردیش کے گورکھپور ڈویژن کے تمام اضلاع سیلاب کی زد میں،سڑکیں بہہ گئیں

گورکھپور : پڑوسی ملک نیپال میں موسلا دھار بارش اور بادل پھٹنے کے واقعات کا اثر مشرقی اتر پردیش میں نظر آنے لگا ہے جس کی وجہ سے گورکھپور ڈویزن کے تمام اضلا ع سیلاب کی زد میں آ گئے ہیں۔ گورکھپور ضلع کے مانی رام علاقے میں قومی شاہراہ پر روہت ندی کا سیلاب کے پانی آنے سے نیپال، سدھارتھ نگر اور فریندا سے گورکھپور رابطہ سڑک پررکاوٹ پیدا ہوگئی ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق کئی علاقوں کی رابطہ سڑک ٹوٹ یا بہہ گئی ہیں۔ باندھو ں پر پانی کا دباؤبڑھ رہا ہے۔ ضلع کے جنگل کوڈیا بلاک سے ملحق چیوٹہا گاؤں روہن ندی کے پانی سے ڈوب گیا ہے جس سے گورکھپور۔سنولی قومی شاہراہ پر دو فٹ پانی آنے سے ٹریفک متاثر ہو گیا ہے اور بڑی گاڑیوں کو آنے جانے سے روک دیا گیا ہے۔
سینکڑوں ایکڑ فصل اور کئی پرائمری اسکول ڈوب ہوگئے ہیں۔ انتظامیہ راحت و بچاؤ کام میں مصروف ہے۔ سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں انتظامیہ نے آٹھویں کلاس تک کے تمام اسکولوں کو بند کرنے کی ہدایت دی ہے۔ ہابرٹ باندھ پر ریگولیٹر میں کل رساو کے سبب کئی محلے ڈوب گئے ہیں اور وہاں کے لوگ محفوظ مقام پر جا رہے ہیں۔سیلاب اس قدر زبردست ہے کہ لوگوں کو اپنے بیوی بچوں ور مویشیوں کے ساتھ سڑک کے کنارے اونچے مقامات پر پناہ لینا پڑ رہی ہے۔سیلاب کا پانی اتنی تیزی سے آیا کہ لوگ اپنا سامان تک نہ سمیٹ سکے اور جو ہاتھ لگا بس وہی اٹھا کر بھاگ کھڑے ہوئے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: In vicinity of gorakhpur families on highway with their children cattle in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: ,

Leave a Reply