اگروزیر اعظم بڑے صنعتکاروں کے قرضے معاف کرسکتے ہیں تو کسانوں کا کیوں نہیں: راہل گاندھی

رائے پور: چھتیس گڑھ میں 20نومبرکو ہونے والی دوسرے مرحلہ کی پولنگ اور اس ماہ کے اواخر میں ہونے والے مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات سے قبل وزیر اعظم نریندر مودی اور کانگریس صدر راہل گاندھی نے بڑے پیمانے پر انتخابی مہم چھیڑ دی اور ایک دوسرے پر کاری وار کرنے کے لیے اپنے سیاسی ہتھیاراستعمال کرنا شروع کر دیے۔

سیونی انتخابی حلقہ میں راہل گاندھی نے کہا کہ حصول اراضی قانون پر ابھی تک مدھیہ پردیش میں عمل آوری نہیں ہوئی۔بڑے بڑے صنعتکار کسانوں، آدی واسیوں کی زمینیں غیر قانونی طریقہ سے زبردستی ہڑپ رہے ہیں۔

یہاں روزگار نام کی شے نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ شیو راج سنگھ چوہان نے ہزاروں وعدے کیے لیکن کوئی ودہ نہیں نبھایا۔ ویاپم گھپلے کا کیاہوا جس میں50گواہوںکو ہلاک کر دیا گیا۔ انہوں نے مدھیہ پردیش کو بدعنوانی کا مرکز بنا دیا ہے۔

راہل گاندھی نے یہ بھی کہا کہ اگر وزیر اعظم ہندوستان کے دولتمند ترین لوگوں کا قرضہ معاف کر سکتے ہیںتو کسانوں کا قرضہ کیوں معاف نہیں کیا جاسکتا۔واضح ہو کہ 20نومبر کو چھتیس گڑھ کے72حلقوں میں دوسرے مرحلہ کی پولنگ ہوگی جبکہ 28نومبر کو مدھیہ پردیش میں230اسمبلیوں کے سیٹوں پر انتخابات ہوں گے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: If pm can waive off bank loans of indias richest then why not farmers loan says rahul gandhi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
What do you think? Write Your Comment