عدالت میں مارپیٹ معاملہ: ہاتھ میں بندوق ہوتی تو گولی ہی مار دیتا:بھاجپا ایم ایل اے

نئی دہلی: پٹیالہ ہائی کورٹ میں پیر کے روز جے این یو اسٹوڈنٹس یونین کے صدر کنہیا کمار کی پیشی کے دوران سی پی آئی کارکن عمیق جامعی سے مار پیٹ کرنے کے معاملہ میں دہلی کے بی جے پی ممبر اسمبلی او پی شرما نے کہا ہے کہ اگر اس وقت میرے ہاتھ میں بندوق تو میں گولی مار دیتا۔ انہوںنے پوچھا کہ کوئی ہماری ماں کو گالی دے گا تو کیا اسے مارے گا نہیں۔انہوں نے منگل کے روز اس پورے واقعہ کے حوالے سے بتایا کہ جب میں عدالت سے باہر آرہا تھا تو جو بھائی تھے، میں ان کا نام نہیں جانتا، وہ پاکستان زندہ باد کے نعرے لگا رہا تھا۔ میں نے ان کو منع کیا۔ سمجھانے کے باوجود وہ نہیں مانے اور اسی درمیان ہاتھا پائی ہو گئی۔ اور اس شخص نے میرے سر پر وار کیا اور وار کر کے بھاگنے لگا تو میں نے اس کا پیچھا کیا ۔اس کے بعد جو کچھ ہوا وہ آپ کے سامنے ہے۔پولس کمشنر بی ایس بسی نے کہا کہ ممبر اسمبلی شرما نے شکایت کی ہے کہ عدالت میں ان سے مار پیٹ کی گئی۔ ان کی طبی جانچ کرائی گئی لیکن کوئی سخت چوٹ نہیںآئی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: I would have opened fire if i had a gun says o p sharma in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply