ہریانہ میں نابالغہ اور اس کی ماں سے ریپ کے الزام میں7پولس اہلکاروں سمیت18کے خلاف کیس درج

چنڈی گڑھ: ہریانہ پولس نے ایک نابالغہ اور اسکی ماں سے جنسی زیادتی کے معاملہ میں 18افراد بشمول سات پولس اہلکاروں کے خلاف کیس درج کر لیا۔

ہریانہ کے کیتھل ضلع کی پولس سپرنٹنڈنٹ آستھا مودی کے مطابق ایک بچی نے پولس میں شکایت درج کرائی تھی کہ ایک سینیئر پولس افسرنے اس کے اور اسکی ماں کا ریپ کیا ہے۔لڑکی نے یہ بھی بتایا کہ ان دونوں سے ریپ کے دوران سرپنچ اور کئی گاو¿ں اس افسر کے باہر کھڑے پہرہ دیتے رہے ۔

اس لڑکی نے اپنی شکایت میں18افراد کو نامزد کیا تھا جن میں سات پولس اہلکار بھی تھے۔ آستھا نے بتایا کہ تمام ملزموں کے خلاف تعزیرات ہند کی متعلقہ دفعہ کے تحت معاملہ درج کر لیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ واردات کی تحقیقات کے لیے ایک خصوصی تحقیقاتی مٹیم بھی تشکیل دے دی گئی ہے۔واقعہ کی تفصیل بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گا و¿ں پردھان نے اس بچی اور اس کی ماں کو یرغمال بنا یا ہوا تھا۔ ایک روز ایک پولس اہلکار پردھان کے گھر پہنچا اور چوری کے ایک معاملہ میں گھر کی تلاشی کے بہانے اس بچی اور اس کی ماں کا ریپ کیا اور گاو¿ں والے اور کچھ پولس اہلکار گھر کے باہر پہرہ دیتے رہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Haryana18 people booked including 7 cops for raping minor mother in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News
Tags: , ,
What do you think? Write Your Comment