دہلی یونیورسٹی کی طالبہ گرمہر کور کو ملک دشمن کہنا سکھوں کی توہین :دیا سنگھ

جالندھر: آل انڈیا پیس مشن کے قومی صدر دیاسنگھ نے کہا ہے کہ دہلی یونیورسٹی کی طالبہ گر مہر کور کے ذریعہ اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد(اے بی وی پی)کے خلاف فیس بک پر پوسٹ ڈالنے سے پیدا تنازع کے بعد اسے ملک دشمن کے طور پر پیش کرنے سے سکھوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچی ہے۔ مسٹر سنگھ نے آج نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گر مہر کور کا بیان اس کی ذاتی رائے تھی لیکن اسے سیاسی رنگ دے کر گرمہر کو بدنام کیا جارہا ہے۔
پورے معاملے میں آر ایس ایس کی سازش کا شبہ ظاہر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گر مہر کے ساتھ جو سلوک کیا گیا اس سے پورے ملک کے ساتھ ہی پنجاب میں حالات خراب ہورہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ امور داخلہ کے وزیر مملکت کرن رجیجو کا بیان کہ ملک میں ہندووں کی تعداد کم ہورہی ہے ، حقائق پر مبنی نہیں ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ آر ایس ایس بڑی حکمت سے تمام کام انجام دیتا ہے جس کی واضح مثال 1980میں اس وقت ملی جب اس نے کانگریس کو سنگھ کے رنگ میں رنگ دیا اور اس کا پہلا نشانہ سکھ بنے۔ انہوں نے سنگھ کو متنبہ کیا کہ وہ فرقہ پرستی پر لگام لگائے تاکہ ملک میں خراب حالات پیدا نہ ہوں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Gurmehar kaur row in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply