گلبرگ سوسائٹی خونریزی کے مجرموں کی سزا کی نوعیت و میعاد اب10جون کو

احمد آباد: یہاں ایک خصوصی عدالت نے گجرات فسادات کے دوران گلبرگ سوسائٹی ہلاکت خیز حملہ کیس میں جن24افرا کو کانگریس کے سابق ممبر پارلیمنٹ احسان جعفری سمیت 69افراد کو بے رحمی سے قتل کرنے اور زندہ جلا دینے کامجرم قرار دیا تھا ان کی سزا کی نوعیت اور مدت کام فیصلہ اب 10جون کو کیاجائے گا۔
اس کیس میں عدالت کے جج پی بی ڈیسائی نے ان 24میں سے 11کو قتل کا اور باقی13کو آتشزنی، بلوہ او غیر قانونی مجمع لگانے کا مجرم قرار دیا تھا۔ باقی 36ملزموں کو جن میں ایک سابق پولس افسر اور ایک مقامی بی جے پی لیڈر بھی شامل تھا ناکافی شواہد کے باعث بری کر دیا تھا۔
خصوصی سرکاری استغاثہ آر سی کوڈیکر نے اسپیشل کورٹ سے استدعا کی تھی کہ ان تمام24مجرموں کو سزائے موت دی جائے جو حق بجانب ہو گی کیونکہ گلبرگ سوسائتی کا کیس ایک ایسی بہیمانہ اور وحشیانہ واردات ہے کہ شاذ و نادر ہی دیکھنے سننے کو ملتی ہے۔
یاد رہے کہ2002کے گجرات فسادات کے دوران گلبرگ سوسائٹی پر فسادیوں نے حملہ کر کے سابق کانگریس ممبر پارلیمنٹ احسان جعفری سمیت69افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔28فروری2002کو کیے جانے والے اس ہلاکت خیز حملہ میں فسادیوں نے کئی مکانات نذر آتش کر دیے تھے۔39افراد کو زندہ جلا دیا گیا تھا۔
اس کیس کی سماعت سپریم کورٹ کی، جس نے کہ31مئی تک مقدمہ فیصل کرنے کو کہا تھا، نگرانی میں کی جارہی تھی۔اور2جون کو خصوصی عدالت کے جج پی بی ڈیسائی نے 66ملزموں میں سے 24کو مجرم قرار دیا تھا۔
اس سے قبل 29اگست2012کو خصوصی عدالت نے اپنے فیصلہ میں32ملزموں بشمول ایک ریاستی وزیر کو مجرم قرار دیا تھا۔ایس آئی ٹی نے جن66افراد کو ملزم بنایا تھا ان میں سے9گذشتہ14سال سے جیل میں بند ہیں۔ جبکہ باقی ضمانت پر ہیں۔اس مقدمہ میں کم و بیش338گواہوں سے جرح ہوئی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Gulbarg society case verdict deferred till june 10 in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply