گجرات کی ایک عدالت نے توگڑیا و 38دیگر کو بری کر دیا

احمد آباد: سرکاری وکیل کے اس بیان کے بعد کہ گجرات حکومت وشو ہندو پریشد لیڈر سمیت تمام39افرا دکے خلاف 20سال پراناقتل کیس واپس لینا چاہتی ہے احمد آباد کی میٹروپالیٹن عدالت نے وی ایچ پی رہنما پروین توگڑیا اور 38دیگر کو الزامات سے بری کر دیا۔
توگڑیا نے اپنے خلاف مقدمہ واپس لینے پر وزیر اعلیٰ گجرات وجے روپانی، نائب وزیر اعلیٰ نتن پٹیل اور وزیر مملکت داخلہ پردیپ سنگھ جڈیجہ کا شکریہ ادا کیا ۔واضح رہے کہ اسی عدالت نے کیس کی سماعت کے دوران عدالت میں حاضر نہ ہونے پر جنوری کے اوائل میں توگڑیا اور 38دیگر کے خلاف غیر ضمانتی وارنٹ جاری کر دیے تھے۔
جس پر توگڑیا نے کہا تھا کہ انہیں پولس نے کبھی سمن کی تعمیل نہیں کرائی اور ان کے خلاف ایک سازش رچی جارہی ہے۔یہ قتل کیس مئی1996میں اس وقت دائر کیا گیا تھا جب اس وقت کے ایک بی جے پی لیڈر شنکر سنگھ وگھیلا نے اس وقت کے وزیر اعلیٰ کیشو بھائی پٹیل کےخلاف علم بغاوت بلند کیا تھا۔
کیشو بھائی کے وفاداروں نے وگھیلا کے معاون آتما رام پٹیل پر جو خود بھی ایک سینیئر بی جے پی لیڈر تھے،حملہ کر دیا تھا۔ توگڑیا اور دیگر پر الزام تھا کہ انہوں نے ایک اس فنکشن میںجس میں وزیر اعظم اٹل بہاری باجپئی کو تقریر کرنا تھی، آتما رام کی دھوتی کھینچ کر انہیں برہنہ کر دیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Gujarat court drops attempt to murder charges against togadia in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply