رافیل سودے پر فرانس کے سابق صدر کے بیان کے بعد سیاسی پارٹیوں کا ردعمل

نئی دہلی:فرانس سے رافیل جنگی طیاروں کی خریداری کے سودے پر فرانس کے سابق صدر فرینکوئس ہولاندے کے بیان کے بعد ہندوستانی سیاست کے میدان میں گھمسان کا رن پڑا ہے اور اب کانگریس کے بعدمارکسی کمیونسٹ پارٹی(سی پی ایم) اور یہاں تک کہ خود بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی)کے رہنما بھی مودی کو ہدف تنقید بنانے لگے ہیں۔

سی پی ایم نے کہا کہ اولاندے کے تازہ بیان سے مودی حکومت کا جھوٹ پوری طرح اجاگر ہوگیا ہے اس لئے اب اس سودے کی تحقیقات پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی سے کرائی جانی چاہئے۔سی پی ایم پولٹ بیورو نے ایک بیان میں کہا کہ مسٹر اولاندے نے واضح کردیا ہے کہ جب یہ دفاعی سودا ہوا تب مرکزی حکومت نے ا نل انبانی کی کمپنی ریلائنس ڈیفنس کا نام تجویز کیا تھا۔

اس طرح وزیر دفاع نرملا سیتا رمن اور وزیر اعظم نریندرمودی کا جھوٹ اجاگر ہوگیا ہے لہٰذا اس کی فوراً مشترکہ پارلیمانی کمیٹی سے ا تحقیقات کرائی جانی چاہئے تاکہ اس سودے میں مسٹر مودی کے رول کا پتہ چل سکے ۔

اسی دوران کانگریس ترجمان رندیپ مسرجے والا نے کہا کہ کانگریس صدر راہل گاندھی کی مسٹر مودی پر تنقید کے بعد مرکزی حکومت نے وزی قانون روی شنکر پرساد کو میدان میں اتارا ہے ۔

اور روی شنکر وزیر قانون ہوتے ہوئے بھی غیر قانونی باتیں کر رہے ہیں۔وہ غرور و تکبر کا پیکر بنے ہوئے ہیں۔ علاوہ مازیں وہ اس لیے اس سودے میں صفائی بعد صفائی پیش کررہے ہیں کیونکہ وہ ریلائنس کے وکیل رہ چکے ہیں۔

بی جے پی کے باغی لیڈرشتروگھن سنہا نے کہا کہ یہ پبلک ہے سب جانتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب پانی سر سے گذر چکا ہے اس لیے وزیر اعظم کو سامنے آکر صفائی پیش کرنی چاہیے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Government should come clean on rafale deal in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply