حکومت سفارتکاری کی پالیسی میں تبدیلی لائے : غلام نبی آزاد

سہارنپو: کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد نے شمالی کشمیر کے اڑی سیکٹر میں فوج کے کیمپ پر گزشتہ روز ہونے والے دہشت گردانہ حملے پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے مرکزی حکومت کو اپنی سفارتکاری میں تبدیلی لانے کا مشورہ دیا۔ مسٹر غلام نبی آزاد نے نامہ نگاروں سے آج یہاں کہا کہ “جب دشمن ہمارے فوجیوں پر حملہ کرتا ہے تو حکومت کو سفارتکاری میں تبدیلی کے ساتھ استقلال پیدا کرنے کی ضرورت ہے۔
انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے حملے کے سلسلے میں حکومت کو اپوزیشن کے ساتھ مل کر ملک کے مفاد میں بات چیت کرنی چاہئے۔ پاک و چین کے ساتھ غیر ملکی سفارت کاری میں تبدیلی لایا جانا ضروری ہو گیا ہے۔ کانگریسی لیڈر نے وزیر اعظم نریندر مودی پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ صرف غیر ممالک میں گھومنے سے یا دعوتوں کے مزے لینے سے حکومت سفارتکاری سمجھ نہیں سکتی۔
انہوں نے کہا کہ انتخابات سے پہلے مسٹر مودی پاکستان کو للکارتے تھے لیکن اب وہاں جاکر ان کی دعوت کا لطف لیتے ہیں تو کبھی چین کے وزیر اعظم کو جھولا جھلا رہے ہیں۔ مسٹر غلام نبی آزاد نے کہا کہ 67 سال میں پہلی بار جموں و کشمیر میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی مخلوط حکومت بنی ہے۔ریاستی حکومت وادی کشمیر میں کشیدگی کے 75 دن گزر جانے کے باوجود بھی حالات معمول پر لانے میں ناکام رہی ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Government bring a shift in diplomacy azad in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply