بلانقدی لین دین کو فروغ دینے کے لئے ٹیکس میں رعایت کی جائے گی: جیٹلی

نئی دہلی:حکومت نے ملک میں بلا نقدی سے معیشت کو فروغ دینے کے لئے دو کروڑ روپے تک کے سالانہ کاروبار کرنے والوں کو ٹیکس میں چھوٹ دینے کا اعلان کیا ہے۔ وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ رواں مالی سال کے بجٹ میں ہی غیر تحریری ادائیگی کو فروغ دینے کے لئے حوصلہ افزائی کی بات کہی گئی تھی۔
اسی کے تحت ایسے کاروباری جو بہی کھاتہ نہیں رکھتے ہیں ان کے لئے انکم ٹیکس کی دفعہ 44 اے ڈی پر نظر ثانی کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے تحت دو کروڑ روپے تک سالانہ کاروبار کرنے والے تاجروں اور چھوٹے صنعت کاروں کی متوقع آمدنی کل کاروبار کی آٹھ فیصد رقم پر ٹیکس لگے گا۔ لیکن، اگر کاروبار کے لئے کریڈٹ کارڈ، چیک یا کسی دوسرے الیکٹرانکس طریقے سے لین دین کیا جاتا ہے تو اس کاروبار کی محض چھ فیصد رقم ہی قابل ٹیکس ہوگی۔
اس سے کاروباریوں کو 30 فیصد سے زیادہ کا ٹیکس فوائد ہوں گے۔ قابل ذکر ہے کہ حکومت نے 8 نومبر کی درمیانی شب سے 500 اور ایک ہزار روپے کے پرانے نوٹوں کی لین دین سے بند کر دیا ہے اور اب ڈیجیٹل ادائیگی کو فروغ دے رہی ہے۔ اسی کے تحت کارڈ سے ادا کرنے والوں کے لئے کئی طرح کی حوصلہ افزائی کے اعلان کئے گئے ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Go in for cashless transactions and get discounts in taxes says arun jaitly in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply