اترپردیش میں ایک اسکول کی تین طالبات کو اسکرٹ اترواکر گھمایا، پرنسپل معطل

سون بھدر:اترپردیش میں سون بھدر کے انپرہ علاقے میں ہوم ورک نہ کرنے پر طالبات کو اسکرٹ اترواکر کلاس روم میں گھمانے کا معاملہ روشنی میں آیا ہے۔زونل ایجوکیشن افسر میورپور دلیپ کمار نے بتایا کہ الیکٹرسٹی کونسل جونیئر ہائی اسکول میں آٹھویں جماعت کی تین طالبات کے ذریعے سنسکرت کا اشلوک یا د نہ کرنے پر پرنسپل کے ذریعے طالبات کا اسکرٹ اتروا کر کلاس روم میں گھمانے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ ان لڑکیوں کے گھر والوں نے اس بارے میں فیکس کے ذریعے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے شکایت کی ہے۔
شکایت کرنے والی طالبات کے مطابق سنیچر کو ہوم ورک نہ ہونے پر تین طالبات کا اسکرٹ اترواکر کلاس روم میں گھماتے ہوئے تمام طالبات کو یہ ہدایت دی گئی کہ اگر تم بھی کام پورا نہیں کروگی تو تم سبھی کے ساتھ ایسا ہی کیا جائے گا۔ طالبات کو اسکول کے احاطے میں راؤنڈ لگوایا گیا۔ طالبات کے گھر والوں کے مطابق لڑکیوں کو لات گھونسوں سے بھی مارا پیٹا گیا۔ اسکول سے چھٹی ہونے کے بعد ڈرمی سہمی طالبات نے اپنے گھر والوں کو پوری داستان سنائی۔ بچیوں کی گھبراہٹ سے گھر والوں نے پرنسپل کے خلاف ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کے پاس شکایت نامہ بھیجنے کا فیصلہ کیا اور سخت کارروائی کا مطالبہ کیا۔ اس معاملے میں پرنسپل مینا سنگھ کو معطل کردیاگیا ہے۔

Title: girls stripped off skirt and paraded in a school in up | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply