گؤ رکشکوں نے گایوں کو محفوظ مقام پر منتقل کرنے والے بی جے پی کارکن کو ہی پیٹ پیٹ کر ہلاک کر دیا

اڈوپی(کرناٹک): (یواین آئی) گؤرکھشکوں کی بربریت کاایک اور واقعہ کرناٹک کے اڈپی میں اس وقت پیش آیا جب بی جے پی ایک کارکن کو وشوہندو پریشد اور بجرنگ دل کے چند کارکنوں حملہ کرکے ہلاک کردیا اور چند دیگر کو زخمی کردیا۔ بتایا جاتا ہے کہ کل رات ضلع کے ہیبری علاقہ میں پیش آیا۔
سپرنٹنڈنٹ پولیس کے ٹی بالا کرشنا نے بتایا کہ پروین پجاری اور اکشے دیوا دیگا کو حملہ آوروں نے گھیر لیا وہ ایک گاڑی میں تین گایوں کو منتقل کررہے تھے۔ وشوہندو پریشد اور بجرنگ دل کے کارکنوں نے جو چھپ کر ان کا انتظار کررہے تھے تیز دھار ہتھیاروں سے حملہ کردیا۔ پجاری کی موقع پر ہی موت ہوگئی جبکہ دیوا ڈیگا کو برہما وار کے اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔ اس واقعہ کے سلسلہ میں17افراد کو گرفتار کیا جاچکا ہے جبکہ دیگر کو تلاش کیا جارہا ہے۔
اڈپی اور دکھشن کنٹرا کی ساحلی پٹی میں گذشتہ چند برسوں سے گاو رکھشا کے نام پر اس طرح کے تشدد میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔ یہ واقعہ ایسے وقت پیش آیا جبکہ مرکزی وزارت داخلہ نے گاو رکھشا کے نام پر تشدد کو روکنے کے لئے ریاستی حکومتوں کو ہدایتیں دی ہیں اور گائے کے تحفظ کے نام پر قانون اپنے ہاتھ میں لینے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی ہدایت دی ہے۔
وزیراعظم مودی نے بھی گاو رکھشا کے نام پر بے قصوروں کی ہلاکتوں اور زدوکوب کئے جانے کے واقعات پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ غیر سماجی عناصر گاو رکھشا کے نام پر تشدد پھیلارہے ہیں اور ملک و سماج کو تقسیم کررہے ہیں۔ اسی دوران کرناٹک کے وزیر داخلہ جی پرمیشور نے بتایا کہ مویشیوں کی تجارت سے متعلق کاروباری مخاصمت بی جے پی کارکن کی ہلاکت کا سبب ہوسکتی ہے۔ بنگلور میں انہوں نے بتایا کہ پولیس اس معاملہ کی تحقیقات کررہی ہے اور اس واقعہ میں کوئی فرقہ وارانہ پہلو نظر نہیں آتا ہے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Gau rakshak strikes again killed bjps cattle trader in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply