تین طلاق کو غیر آئینی قرار دینے کے لیے سپریم کورٹ سے استدعا

نئی دہلی:جہاں ایک طرف سپریم کورٹ کثرت ازدواج اور دوبارہ نکاح پرپابندیوں کے علاوہ بیک وقت تین طلاق کے رواج کے حوالے سے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کی سماعت کرنے پر رضامند ہو گئی ہے وہیں مزید دو مسلم خواتین نے تین طلاق کے جواز کو چیلنج کر دیا۔
راجستھان کے دارالخلافہ جے پور کی ایک رہائشی آفرین رحمٰن نے اپنے شوہر کی جانب سے اسپیڈ پوسٹ ڈاک کے ذریعہ بھیجے گئے طلاق نامہ کو چیلنج کیا ہے تو تمل ناڈو کی سابق ممبر اسمبلی بدر سعید نے سپریم کورٹ میں فریاد کی ہے کہ ان کی ریاست میں قاضیوں نے آئے روز مسلم مردوں کو یہ سرٹی فیکٹ جاری کرنا اپنا وطیرہ بنا لیا ہے جس میں وہ بیک وقت تین طلاق کو درست اور جائز قرار دیتے ہیں۔
آفرین نے عدالت عظمیٰ سے استدعا کی ہے کہ شرعی قانون کے تحت تین طلاق کا نظام ،جو مردوں کو طلاق دینے کا یکطرفہ حق دیتا ہے ،قانون کی رو سے غیر موزوں اور غیر آئینی قرار دیا جائے۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Fresh plea in sc against triple talaq system of muslim divorce in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply