11سکھ زائرین کو فرضی انکاؤنٹر میں ہلاک کرنے کے جرم میں47پولس اہلکاروں کو عمر قید کی سزا

پیلی بھیت: اتر پردیش کے پیلی بھیت شہر میں 11سکھ یاتریوں کو دہشت گرد قرار دے کر ہلاک کردینے والے 47پولس اہلکاروں کو پیر کے روز لکھنؤ کی خصوصی سی بی آئی عدالت نے عمر قید کی سزا سنادی۔
واضح رہے کہ جولائی 1991میں یہ سکھ زائرین بہار میں پٹنہ صاحب اور مہاراشٹر میں حضور صاحب کے درشن کے بعد واپس آرہے تھے کہ پیلی بھیت کے پاس پولس نے انہیں بس سے اتارا اور تین الگ جنگلوں میں لے جا کر انہیں گولی مار دی۔پولس نے کہا تھا کہ اس نے 11دہشت گردوں کو انکاو¿نٹر میں مار گرایا ہے۔لیکن جب یہ عقدہ کھلا کہ وہ سکھ زائرین تھے تو ہنگامہ کھڑا ہو گیا۔
واقعہ یوں بتایا جاتا ہے کہ 29جون 1991کو اتر پردیش کے سیتار گنج 25سکھ زائرین کا جتھہ پٹنہ صاحب ،حضور صاحب اور نانکامتا صاحب کے درشن کے لیے نکلا تھا۔13جولائی کو اس جتھے کو پیلی بھیت آنا تھا۔ لیکن12جولائی کو ہی پیلی بھیت سے پہلے 60-70پولس والوں نے ان کی بس کو گھیر لیا اور انہیں اتار لیا۔ بس میں 13مرد، خواتین اور تین بچے تھے۔پولس نے خواتین ،بچوں اور دو بزرگوں کا چھوڑ دیا لیکن 11نوجوانوں کو اپنے ساتھ لے گئے
۔پولس نے تلوندر نام کے ایک نوجوان کو مار کر ندی میں بہادیا تھا جس کی لاش کبھی نہ مل سکی۔باقی دس سکھوں کو پولس والے دن بھر بس میں شہر گھماتے رہے اور رات میں ان کے ہاتھ باندھ کر تین ٹولیوں میں بانٹ دیا ۔ اور الگ الگ جنگلوں میں لے جا کر گولیوں سے بھون ڈالا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Forty seven policemen sentenced to life in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply