لالو یادو کو چارہ گھپلے کے چوتھے کیس میں14 سال قید کی سزا

رانچی: بہار کے سابق وزیر اعلیٰ وراشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے سربراہ لالو پرساد یادو کو عدالت سے بالکل بھی راحت نہیں مل رہی بلکہ یکے بعد دیگر معاملات میں ان کی سزا میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے۔
چارہ گھپلے میں ہی اس بار دمکا ٹریژری کیس میں جو 3.13کروڑ روپے نکالنے کا ہے، رانچی کی ایک خصوصی سی بی آئی عدالت نے دو دفعات کئے تحت سات سات سال کی سزا سنادی۔چارہ گھپلے کے چوتھے کیس میں سی بی آئی عدالت نے 19مارچ کو انہیں مجرم قرار دیا تھا۔
اس مقدمہ میں لالو یادو کو تعزیرات ہند کی دفعہ 120اور پی سی ایکٹ کے تحت 7-7سال کی سزا سنائی گئی ہے اور 30-30لاکھ روپے جرمانہ کیا گیا ہے۔
لالو یادو دوسرے چارہ گھپلا کیس میں مجرم قرار دیے جانے کے بعد 23دسمبر 2017سے رانچی کے برسہ منڈل جیل میں قید ہیں۔لالو یادو کو چاروں معاملات میں سنائی گئی یہ اب تک کی سب سے بڑی سزا ہے۔

Title: fodder scam lalu prasad gets 14 yrs in jail in dumka treasury case | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply