آسام سیلاب زدگان کو کوئی سرکاری امداد نہیں پہنچائی جارہی:مولانا اجمل

گوہاٹی/ نئی دہلی: آسام میں آئے تباہ کن سیلاب متاثرہ علاقوں کے دورہ پرگئے آل انڈیا یونائٹیڈ ڈیموکریٹک فرنٹ کے قومی صدر و رکن پارلیمنٹ مولانا بدرالدین اجمل نے آج لگاتار تیسرے دن دھبری اور گوالپاڑہ کے محتلف علاقوں میں جاکر حالات کا جائزہ لیا اور لوگوں سے مل کر ان کی ہر ممکن امداد کی یقین دہانی کی۔
انہوں نے کہا کہ لوگ انتہائی بری حالت میں ہیں،سیلاب نے ان کا سب کچھ چھین لیا ہے، تباہی کا منظر دیکھ کر رونا آتا ہے۔ مولانا نے کہا کہ سرکار اپنی پیٹھ تھپتھپا رہی ہے کہ وہ متاثرین کو راحت پہنچانے میں پوری طرح مصروف ہے مگر حقیقت یہ ہے کہ ہم جہاں بھی اب تک گئے ہیں لوگوں نے کسی بھی سرکاری امداد پائے جانے سے انکار کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ سرکار کے نمائندہ ہم تک پہونچے ہی نہیں ہیں۔ مولانا نے کہا کہ سرکار سے ہمارا مطالبہ یہ ہے کہ وہ بلا تفریق متاثرین کو امداد پہنچانے کا حکم جاری کرے اور مصیبت کی اس گھڑی میں سیاسی مفاد اور تعصب کو بالائے طاق رکھ کر انسانیت کا مظاہرہ کرے۔
مولانا نے کہا کہ دھبری، گوالپاڑہ، بارپیٹا بری طرح متاثر ہیں۔ گھر وں میں پانی گھس گئے ہیں ،راستے اورپل ٹوٹ چکے ہیں، سڑکیں ٹوٹنے کی وجہ سے گاؤں کا کنکشن شہروں سے ختم ہو گیا ہے،لوگوں تک کھانے کی چیزیں، پینے کا صاف پانی نہیں مل پا رہا ہے۔ لوگوں میں بیماریاں پھیل رہی ہیں مگر دوائیں نہیں مل پارہی ہیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Flood relief in lower assam inadequatebadruddin ajmal in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply