مسلم کنبہ کے ہاتھوں ناموس کے نام پر قتل کیے جانے والے ہندو نوجوان کا باپ پیغام محبت دینے افطار پارٹی دے گا

نئی دہلی:قومی دارلخلافہ میں اسی سال فروری میں ایک مسلم کنبہ نے اپنی بیٹی سے محبت کرنے والے انکت سکسینہ نام کے جس ہندو لڑکے کو پیٹ پیٹ کر ہلاک کر دیا تھا اس کے والد یشپال شرما نے رمضان کے مقدس ماہ میں مذہبی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر بھائی چارے اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کے لیے 3جون کو افطار پارٹی کا اہتمام کیا ہے۔

اس افطار پارٹی میں مقامی پولس اہلکاروں اور افسران کے علاوہ سبھی مذاہب کے لوگوں کو مدعو کیاگیا ہے۔یہی نہیں بلکہ انکت سکسینہ کے والد نے بیٹے کی یاد میں ایک ٹرسٹ بھی کھولنے کا اعلان کیا ہے۔

واضح ہو کہ فروری کی ایک رات کو انکت رگھوبیر نگر علاقہ میں واقع اپنے گھر سے اپنی سینٹرو کار میں جارہا تھا کہ راستے میں اس کی گرل فرینڈ سلیمہ کے گھر والوں نے اس کی کار روک لی اور اسے اتار کر بے تحاشہ پیٹنا شروع کر دیا۔اور پھر سلیمہ کی ماں،ماموں اور بھائی نے انکت کو دبوچ لیا اور سلیمہ کے باپ نے اس کے گلے پر چھرے سے وار کیاجس سے اس کی موقع پر ہی موت ہو گئی تھی۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Father of honour killing victim ankit saxena to organise iftar to spread the message of love in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply