فاروق عبداللہ کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کر لیا گیا

سری نگر: جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ و نیشنل کانفرنس صدر فاروق عبداللہ جو5اگست کو دفعہ370کی تنسیخ کے بعد سے سری نگر میں اپنی رہائش گاہ میں خانہ نظر بند ہیں پبلک سیفٹی ایکٹ (پی ایس اے) کے تحت گرفتار کر لیا گیا۔

اس قانون کے تحت حکومت کو یہ اختیار حاصل ہے کہ وہ گرفتار شخص کو مقدمہ چلائے بغیر دو سال تک قید میں ڈال سکتی ہے۔فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت گرفتار کرنے کا فیصلہ اتوار کی شب کیا گیا۔

حکومت نے فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت گرفتار کرنے کے بعد ان کے مکان کو ذیلی جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔وہ اپنے مکان میں ہی قید کی زندگی گذاریں گے تاہم احبا ب و رشتہ داروں سے ملاقات پر کوئی پابندی نہیں لگے گی ۔

اس سے قبل وزیر داخلہ امیت شاہ نے پارلیمنٹ میں کشمیر پر بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ فاروق عبداللہ گھر سے باہر نکلنے تیار نہیں ہیں اور انہیں گرفتار نہیں کیا گیا ہے۔شاہ نے یہ بھی کہا تھاکہ اب حکومت انہیں بندوق کی نال پر تو گھر سے باہر نہیں لا سکتی۔

فاروق عبداللہ کی گرفتاری سے پہلے کشمیری لیڈر شاہ فیصل کو بھی جموں و کشمیر پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت گرفتار کیا جا چکا ہے۔

5اگست کو مرکزی حکومت کی جانب سے جموں و کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والی دفعہ 370ختم کیے جانے کے بعد سے کشمیر میں50سے زائد سیاست دانوں اور لیڈروں کو گرفتار یا خانہ نظر بند کیا جاچکا ہے۔ کشمیر کے اعلیٰ سیاستداں اور علیحدگی پسند لیڈران بشمول سابق وزراءاعلیٰ عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی بھی گذشتہ40روز سے خانہ نظربند ہیں۔

Read all Latest kashmir news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from kashmir and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Farooq abdullah detained under stringent jk public safety law in Urdu | In Category: کشمیر Kashmir Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.