بی جے پی کی الیکشن کمیشن سے یوپی کے چیف سکریٹری اور ڈی جی پی کی شکایت

نئی دہلی:بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے الیکشن کمیشن سے مل کر اتر پردیش کے چیف سکریٹری، پولیس ڈائریکٹر جنرل اور ایڈیشنل پولیس ڈائریکٹر جنرل کے رویے اور طرز عمل کو انتہائی قابل اعتراض اور متعصب قرار دیتے ہوئے ان کا فوری طور پر تبادلہ کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ منصفانہ، آزادانہ اور بے خوف انتخابات کا انعقاد یقینی بنایا جاسکے۔
مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو، نرملا سیتا رمن اور مختار عباس نقوی نے یہاں الیکشن کمیشن میں اس ضمن میں ایک میمورنڈم سونپا۔ کمیشن کے ساتھ ملاقات کے بعد مسٹر نائیڈو نے باہر موجود نامہ نگاروں سے کہا کہ حکمراں سماج وادی پارٹی کے دباؤ میں آکر ریاست کی انتظامی مشینری انتہائی جانبدار طریقے سے برتاؤ اور طرز عمل اپنا رہی ہے۔ سماج وادی پارٹی کے غنڈہ راج میں انتظامی افسر دیگر جماعتوں کو انتخابی سرگرمیوں کی اجازت دینے میں یا تو تاخیر کرتے ہیں یا انکار کر رہے ہیں۔
اتنا ہی نہیں، سماج وادی پارٹی کے کارکنوں کے دباؤ میں آکر متعدد مقامات پر لوگوں کو انتخابات کے پہلے نقل مکانی کرنا پڑ رہی ہے۔ مسٹر نائیڈو نے کہا کہ متعدد اضلاع میں افسر چار سال سے زیادہ عرصے سے تعینات ہیں اور میرٹھ، کانپور، فیروز آباد سمیت کئی اضلاع میں ضلع ،مجسٹریٹ پر جانبدار طریقے سے کام کرنے کا دباؤ ڈالا جارہا ہے۔ سب کو معلوم ہے کہ انہیں اشاروں میں سمجھایا جا رہا ہے کہ اگر ایس پی دوبارہ جیت گئی تو حکم عدولی کرنے والوں کو نشانہ بنا کر کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ زمینی سطح پر بڑے پیمانے پر شکایتیں ملنے کے بعد بی جے پی کو کمیشن میں آکر شکایت کرانی پڑی ہے ۔

Title: ensure free and fair election in state venkaiah led bjp delegation urges ec | In Category: ہندوستان  ( india )

Leave a Reply