کیجری وال کے الزامات سے دل برداشتہ الیکشن کمشنر نے عام آدمی پارٹی کے معاملات سے خود کو الگ کیا

نئی دہلی:دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کی طرف الیکشن کمیشن کے اراکین کی جانبداری پر سوال اٹھائے جانے کے بعد الیکشن کمشنر او پی راوت نے کمیشن میں عام آدمی پارٹی سے وابستہ کسی بھی معاملے پر کارروائی میں حصہ نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔ کمیشن کے ذرائع نے آج یہاں خبر رساں ایجنسی یواین آئی کو بتایا کہ ایک انگریزی اخبار کو دیئے انٹرویو میں مسٹر کیجریوال نے الیکشن کمشنر اے کے جیوتی کو وزیر اعظم نریندر مودی اور مسٹر راوت کو مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان کا قریبی بتائے جانے اور عام آدمی پارٹی کے تئیں ان کے جانبدارانہ کردار پر سوال اٹھائے جانے سے کمیشن کی ساکھ کو دھکا لگا ہے۔
ذرائع نے بتایا کہ مسٹر راوت نے اس سلسلے میں فوری طور پر قدم اٹھاتے ہوئے چیف الیکشن کمشنر کو خط لکھ کر خود کو عام آدمی پارٹی کے حوالے سے زیر بحث آنے والے تمام معاملات پر کارروائی سے الگ کرنے کی بات کہی ہے۔ مسٹر راوت مدھیہ پردیش کیڈر کے 1977 بیچ کے انڈین ایڈمنسٹریٹیو سروس کے افسر رہے ہیں اور 31 دسمبر 2013 کو مرکزی پبلک انٹرپرائزز کے سیکرٹری کے عہدے سے ریٹائرڈ ہوئے تھے۔ وہ اس سے پہلے مدھیہ پردیش حکومت میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری رہ چکے ہیں۔ وہ کم از کم دو مواقع پر چیف سکریٹری بنائے جانے سے محروم رہے۔ ان کے جونیئر افسران کو یہ مواقع ملتے رہے۔ انہیں اگست 2014 میں الیکشن کمشنر کے عہدے پر مقرر کیا گیا تھا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Election commissioner o p rawat will not take part aam aadmi party related matter in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply