الیکشن کمیشن نے مدھیہ پردیش میں 60لاکھ جعلی ووٹرز الزام کی تحقیقات کا حکم دے دیا

نئی دہلی: کانگریس کے اس الزام کے بعد کہ مدھیہ پردیش میں 60لاکھ فرضی ووٹرز ہیں الیکشن کمیشن آف انڈیا نے ریاست میں انتخابی فہرستوں میں مبینہ گڑبڑی کی تحقیقات کا حکم جاری کرتے ہوئے دو ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔

یہ ٹیمیں ان الزامات کی تحقیقات کریں گی اور7جون کو اپنی حتمی رپورٹ دا خل کردیں گی۔ اگریہ ثابت ہوگیا کہ یہ حرکت دانستہ طور پر کی ہے تو مناسب کارروائی کرنے کے لیے کسی کو ذمہ دا ر ٹہرایا جائے گا۔

واضح ہو کہ اس ضمن میں مدھیہ پردیش کانگریس صدر کمل ناتھ اور سینیئرلیڈر جیوتر دتیہ سندھیا کی قیادت میں ایک وفد نے الیکشن کمیشن سے ملاقا ت کرکے اس کے سامنے بوگس ووٹروں کا معاملہ رکھا تھا۔

مدھیہ پردیش میںمجموعی طور پر 5کرفوڑ ووٹرز ہیں اور اگر کانگریس کا الزام درست ہے تو اس حساب سے 12فیصد ووٹرز جعلی ہیں۔گذشتہ اسمبلی انتخابات میں کانگریس اوور بی جے پی کے درمیان ووٹوں کا فق محض8.5فیصد تھا۔

واضح ہو کہ اس سال ریاست میں نومبر میں انتخابات ہوں گے۔مسٹر کمل ناتھ نے کہا کہ ہم نے الیکشن کمیشن کو شواہد مہیا کر دیے ہیں۔اور اس ضمن میں انہوں نے کئی مثالیں دیں۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Election commission forms 4 teams to probe bogus voter allegations in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply