کمیونسٹ پارٹی نے قبل از وقت بجٹ اجلاس کو انتخابی ضابطہ کی سراسر خلاف ورزی بتایا

نئی دہلی:ہندوستانی کمیونسٹ پارٹی (سی پی آئی) نے ملک کی پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کے اعلان کے پیش نظر اس بار بجٹ سیشن کو وقت سے پہلے شروع کئے جانے کے مودی حکومت کے فیصلے کو انتخابی ضابطہ اخلاق کی سراسر خلاف ورزی بتایا ہے اور الیکشن کمیشن سے اس پر فوری طور پر روک لگانے کا مطالبہ کیا ہے۔
پارٹی نے ساکشی مہاراج کے معاملے میں بھی سخت کاروائی کرنے کا کمیشن سے مطالبہ کیا ہے۔ سی پی آئی کے سینئر لیڈر اتل کمار انجان نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو اس معاملے میں کاروائی کرنی چاہئے اور خاموش تماشائی بن کر یہ سب دیکھنا نہیں چاہئے کیونکہ یہ مثالی انتخابی ضابطہ اخلاق کی سراسر خلاف ورزی ہے۔
سال 2012 میں جب ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) کی حکومت تھی تب لوک سبھا میں اپوزیشن کی لیڈر سشما سوراج اور راجیہ سبھا میں اپوزیشن کے لیڈر ارون جیٹلی نے الیکشن کمیشن سے مل کر بجٹ سیشن کو بڑھانے کا مطالبہ کیا تھا اور اس کے بعد الیکشن کمیشن کی ہدایت پر بجٹ سیشن کو 15 مارچ سے شروع کیا گیا تھا لیکن اب اقتدار میں آنے کے بعد قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) یہ سب بھول گئی اور اس نے بجٹ سیشن 31 جنوری سے بلا لیا جبکہ بجٹ ہر سال فروری کے آخر میں پیش ہوتا تھا۔
انہوں نے کہا کہ الیکشن کمیشن کو اس معاملے میں یو پی اے حکومت اور این ڈی اے حکومت کے درمیان کوئی امتیاز نہیں کرنا چاہئے۔ اگر کمیشن بجٹ سیشن کو آگے بڑھانے کے لئے کوئی ہدایت نہیں دیتا ہے تو عوام کا اس پر سے اعتماد اٹھ جائے گا اور اس کی جانبداری اور معتبریت پر سوالیہ نشان لگ جائے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ec should take action against sakshi maharaj cpi in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply