لال قلعہ فروخت نہیں کیا گیا: وزارت سیاحت

نئی دہلی: مودی حکومت نے حزب اختلاف کے ان الزامات کو خارج کر دیا کہ وہ ہندوستان کے آثار قدیمہ یا ثقافتی یادگاروں کو تجارتی مقصد کے تحت نجی زمرے کی کمپنیوں کو لیز پر دے ر ہی ہے۔مرکزی حکومت نے کہا کہ ڈالمیا بھارت گروپ کو لال قلعہ فروخت نہیں کیا گیا اور نہ ہی اس سے کوئی مالی فائدہ اٹھانا یا اس کی دیکھ ریکھ کی ذمہ داری سے فرار اختیار کرنا مقصود ہے بلکہ لال قلعہ کے انتظامی امور اور اس کی دیکھ ریکھ ، تزئین کاری اور حفاظتی اقدامات کرنے کی ذمہ داریاںنبھانے اور سیاحوں کو بہتر سے بہتر سہولتیں بہم پہنچانے کے حوالے سے مغل شہنشاہ شاہجہاں کے دور میں تعمیر کی گئی اس یادگاری عمارت کو کچھ عرصہ کے لیے ڈالمیا گروپ کے سپرد گیا ہے ۔ اس ضمن میں ڈالمیا گروپ نے مرکزی وزارت سیاحت کے ساتھ قول و قرار کیا ہے۔ واضح ہو کہ مودی حکومت نے ”ایک گاو¿ں گود لینے“ کے طرز پر” ایک ثقافتی یادگار گود لینے “کے تحت لال قلعہ و تاج محل سمیت ملک کی تمام ثقافتی یادگاروں میں سیاحوں کے لیے سہولتیں بہم پہنچانے اور ان آثار قدیمہ کی عمارتوں کانظم نسق دیکھنے کے لیے 31نجی ادارں نے حکومت سے رجوع کیا تھا۔اس ضمن میں ڈالمیا گروپ نے لال قلعہ کی دیکھ بھال کے لیے اسے گود لے لیا ہے اور اس پروہ25کروڑ روپے خرچ کرے گا۔

Read all Latest india news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from india and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Delhis red fort gets adopted by dalmia bharat group in Urdu | In Category: ہندوستان India Urdu News

Leave a Reply